امریکہ میں ایک مسلمان باپ نے بھری عدالت میں بیٹے کے قاتل کو معاف کرکے عظیم مثال قائم کر دی۔ ججز سمیت عدالت میں موجود ہر آنکھ اشکبار

بین الاقوامی

نیو یارک( ڈیلی پاکستان آن لائن) امریکہ میں مقیم تھائی لینڈ کے مسلمان باشندے نے بیٹے کے قاتل کو معاف کر عظیم مثال قائم کر دی۔ کیس کی سماعت کے دوران ڈاکٹر عبدالمنعیم نامی مسلمان نے بیٹے کے قاتل کو معاف کر کے گلے لگا لیاجس سے عدالت میں موجود مجرم اور ججز سمیت عدالت میں ہر آنکھ اشکبار ہوگئی۔
امریکی ریاست کی ایک عدالت نے قتل کے ملزم ٹریک کو 31 سال قید کی سزا سنائی توتھائی لینڈ کے شہری نے اپنے بیٹے کے قاتل کی سزا کو معاف کر عفو در گزر کی عظیم مثال قائم کر دی۔

یہ بھی پڑھیں:سعودی عرب نے بڑے ملک کے دارالحکومت پر حملہ کردیا
ڈاکٹر عبدالمنعیم کا کہنا تھا کہ معاف کرنا اسلام کا عظیم تحفہ ہے لہذا میں تمہیں اپنے بیٹے اور اہل خانہ کی طرف سے معاف کرتا ہوں۔ اس دوران نہ صرف مجرم روتا رہا بلکہ ججز بھی اپنے جذبات پر قابو نہ رکھ سکے اور آبدیدہ ہو کر سماعت میں وقفہ کر دیا۔
تفصیلات کے مطابق عبدالمنعیم کا بیٹا صلاح الدین پیزا ڈلیوری کے لیے مجرم کے فلیٹ پر گیا تھا جہاں مجرم نے پیسے لوٹنے کے لیے صلاح الدین کو چھریوں کے وار کر کے قتل کر دیا تھا۔