بھارت میں100کروڑ سے زائدمالیت کا سانپ کا زہر سمگل کرنے کی کوشش ناکام ، 3گرفتار

بین الاقوامی

کلکتہ (ڈیلی پاکستان آن لائن)بھارت میں 100کروڑ روپے سے زائد مالیت کے سانپ کے زہر کی سمگلنگ ناکام بنا دی گئی ہے ، پولیس نے 3ملزمان کو گرفتار کرکے ان سے سانپ کے زہر سے بھرے ہوئے تین برتن بھی قبضے میں لے لئے ہیں۔

خواجہ سرا کو جنسی ہراساں کرنے پر پولیس سب انسپکٹر کو معطل کر دیا گیا
تفصیلات کے مطابق بھارتی ریاست مغربی بنگال میں بنگال کرائم انوسٹی گیشن او ر بارڈر سیکورٹی فورسز نے مشترکہ کارروائی کے ذریعے 100کروڑ سے زائد مالیت کا سانپ کا زہر قبضے میں لے لیا ہے۔ کارروائی کے دوران تین ملزمان کو گرفتار بھی کیا گیا ہے ۔پولیس کے مطابق سانپ کا زہر غیر قانونی طریقے کے ذریعے بنگلہ دیش بھیجا جا رہا تھا ۔ گرفتار ملزمان کی شناخت نرین داس، دیبوجوتی بوس اور بدھیو کھنرا کے طور پر ہوئی ہے۔تینوں افراد مقامی گینگ سے تعلق رکھتے ہیں جو غیر قانونی طور پر جنگلی جانوروں کے حصے اور سانپ کا زہر بلیک مارکیٹ میں فروخت کرتے تھے۔ محکمہ جنگلات نے سانپ کا زہر اپنی تحویل میں لے کر تحقیقات کا آغاز کردیا ہے۔
واضح رہے کہ یہ اس سال بی ایس ایف کی جانب سے سانپ کے زہر کی سمگلنگ کی چوتھی کوشش ناکام بنائی گئی ہے۔مغربی بنگال میں کسٹم ڈیپارٹمنٹ اور دیگر اداروں نے مختلف آپریشن کے ذریعے اس سال مئی میں70کروڑ مالیت سے زائد کا سانپ کا زہر قبضے میں لیا ہے۔ دوسری جانب مقامی صحافیوں کا کہنا تھا کہ سانپ کے زہر کی سمگلنگ میں محکمہ جنگلات اور بارڈرسیکورٹی فورسز کے اہلکار بھی ملوث ہیں جو بنگلہ دیش کے ذریعے سانپ کا زہر سمگل کرکے دنیا بھر کی بلیک مارکیٹس میں فروخت کرکے ایک خطیر رقم کماتے ہیں۔