انڈونیشیا میں خاتون کو 100 کوڑوں کی سزا، ہسپتال لے جانا پڑگیا، کیا کیا تھا؟ کسی مَرد سے تعلقات قائم نہیں کئے بلکہ۔۔۔ وجہ ایسی کہ کوئی تصور بھی نہیں کرسکتا

بین الاقوامی


جکارتہ(مانیٹرنگ ڈیسک) انڈونیشیاء میں ایک خاتون کو عدالت کی طرف سے ایک ایسا ’جرم‘ کرنے پر100کوڑوں کی سزا سنا دی گئی کہ جان کر ہر کوئی حیران رہ گیا ہے۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق 30سالہ مزیدہ نامی خاتون نے ایک نامحرم مرد کے قریب بیٹھنے کی جرأت کی تھی۔ حالانکہ ان دونوں کے درمیان کوئی بات بھی نہیں ہوئی لیکن پھر بھی خاتون کو گرفتار کرکے عدالت میں پیش کر دیا گیا جہاں سے اسے سو کوڑوں کی سزا سنا دی گئی۔
جب خاتون کو چوراہے میں لوگوں کے سامنے 100کوڑے مارے گئے تو وہ تکلیف برداشت نہ کر سکی اور بے ہوش ہو گئی جس پر اسے فوری طور پر ہسپتال لیجانا پڑ گیا۔ رپورٹ کے مطابق کے مطابق انڈونیشیاء ساڑھے 25کروڑ آبادی کا ملک ہے جس کا 90فیصد مسلمانوں پر مشتمل ہے۔ ملک کے صوبہ آچے میں اسلامی قوانین نافذ کیے گئے ہیں جن کے تحت اختلاط کے مرتکب ہونے والے مردوخواتین کو کوڑوں کی سزا دی جاتی ہے۔