کلبھوشن یادیوکیس، بھارتی وزارت داخلہ نے عالمی عدالت میں جواب جمع کرادیا

بین الاقوامی

نئی دہلی(ڈیلی پاکستان آن لائن) بھارتی جاسوس اور را کے حاضر سروس گرفتاردہشتگرد کلبھوشن یادیو کی پھانسی پرعملدرآمد روکنے کے لیے بھارت کی جانب سے انٹرنیشنل کورٹ آف جسٹس میں جواب داخل کرادیا ہے۔

’پورے گاﺅں کے مردوں کو ایک جگہ پر اکٹھا کر لیا جاتا تھا اور جب گھر پر صرف خواتین اور بچے رہ جاتے تھے تو بھارتی فوجی۔۔۔‘کشمیری خاتون نے بھارتی فوج کی درندگی پوری دنیا کے سامنے کھول کر رکھ دی ،ایسی داستان سنا دی کہ سن کر آپ کی آنکھوں سے آنسو جاری ہو جائیں گے
نجی ٹی وی اے آر وائے نیوز کے مطابق بھارتی وزارت خارجہ نے پاکستان میں دہشتگردی کے الزام میں قیدخفیہ ایجنسی را کے افسر کلبھوشن یادیوکو سزائے موت سے بچانے کیلئے انٹرنیشنل کورٹ آف جسٹس میں جواب جمع کروادیا ہے اور اس میں موقف اختیار کیا ہے کہ جمع کرایاگیا جواب تفصیلی ہے۔ تاہم پاکستان کلبھوشن کیس میں اپنا جواب 13دسمبرکو جمع کرائے گا۔واضح رہے کہ کلبھوشن کراچی اور بلوچسستان میں اپنا دہشتگردی نیٹ ورک چلارہا تھا اوربلوچستان میں موجود انتہاپسندوں کو فنڈنگ بھی کررہا تھا ۔یہی نہیں کلبھوشن یادیو بھارتی خفیہ ایجنسی "را" کے جوائنٹ سیکرٹری کے ماتحت کام کرتا تھا اور کلبھوشن میں پاکستان میں دہشتگردی سمیت فرقہ واریت پھیلانے جیسے سنگین جرائم کا اعتراف بھی کیا ہے۔تاہم گرفتار جاسوس کی جانب سے الزاما ت کا اعتراف کرنے پر فوجی عدالت نے سزائے موت کا حکم سنایاتھاجسے بھارت نے عالمی عدالت میں چیلنج کررکھا ہے ۔