مودی سرکار نے بھارت کی 12سو سے زائد مشہور غیر سرکاری تنظیموں کے خلاف شکنجہ کسنے کا فیصلہ کر لیا،بڑا حکم جاری کر دیا

بین الاقوامی

نئی دہلی(ڈیلی پاکستان آن لائن)مودی حکومت نے بھارت میں کام کرنے والی 12سو 22غیر سرکاری تنظیموں (این جی اوز)کو اپنے بینک اکاؤنٹ کی تجدید اور توثیق کرانے کا حکم دیتے ہوئے انتباہ جاری کیا ہے کہ ایسا نہ کرنے والی تنظیموں کے خلاف ایف سی آر قانون کے تحت سخت قانونی کارروائی کی جائے گی ۔

مزید پڑھیں:کلبھوشن یادیوکیس، بھارتی وزارت داخلہ نے عالمی عدالت میں جواب جمع کرادیا

بھارتی نجی ٹی وی چینل’’زی ٹی وی ‘‘ کے مطابق ہندوستانی وزارت داخلہ نے ملک بھر میں غیر ملکی امداد حاصل کرنے والی 12سو 22غیر سرکاری تنظیموں (این جی اوز )کو اپنے مخصوص بینک اکاؤنٹس کے کھاتے اور اثاثوں کی چھان بین کا حکم دیتے ہوئے کہا ہے کہ مقررہ مدت کے اندر ایسا نہ کرنے والوں کے خلاف ایف سی آر قانون کے تحت سخت ترین قانونی کارروائی کی جائے گی ۔ مودی سرکار کی جانب سے غیر ملکی امداد حاصل کرنے والی جن تنظیموں کو اپنے بینک اکاؤنٹس کی توثیق اور اثاثوں کی چھان بین کرنے کا حکم دیا ہے ان میں بھارت کی انتہائی معروف تنظیمیں سری رام کرشن متھ،رام کرشنا مشن ،انڈور کینسر فاؤنڈیشن،چیئرٹیبل ٹرسٹ،کیمبٹیور کرسچن چیئرٹیبل ٹرسٹ،دہلی سکول آف سوشل ورک سوسائٹی ،مدنی ایجوکیشن اینڈ چیئر ٹیبل سوسائٹی ،رحمت عالم ہسپتال ٹرسٹ،مدنی درات تربیت ٹرسٹ،ہندواناتھ آشرم،روٹری کلب آف ممبئی ،ناگا لینڈ بائبل کالج ،جے کے ٹرسٹ بمبئی ،گونج ،انڈین انسٹیٹوٹ فار نیچر اینڈ انوائرمنٹ سوسائٹی اور دیگر شامل ہیں ۔واضح رہے کہ ایف سی آر قانون کے تحت تمام بینکوں کو کسی بھی این جی او کے اکاؤنٹ میں غیر ملکی امداد جمع ہونے یا ایسے اکاؤنٹ سے پیسے نکالے جانے کی معلومات 48 گھنٹے کے اندر حکومت کو دینا لازمی ہے لیکن مودی سرکار کو اس فہرست میں موجود تنظیموں کے ابھی تک مخصوص بینک اکاؤنٹس کی تصدیق نہیں ہوئی ۔یاد رہے کہ ہندوستان میں ایف سی آر قانون کے تحت 22ہزار سے زائد غیر سرکاری تنظیمیں رجسٹرڈ ہیں جبکہ بھارتی حکومت نے گذشتہ سال نومبر2016ء میں ان تنظیموں کو  28فروری2017 ء تک اپنی رجسٹریشن اور بینک اکاؤنٹ کی توثیق کا حکم دیا تھا تاہم ان 22ہزار سے زائد این جی اوز میں سے صرف 35سو کے قریب تنظیموں نے اپنی رجسٹریشن کی تجدید کرائی تھی جس پر اب مودی حکومت نے غیر تصدیق شدہ این جی اوز کے خلاف سخت ایکشن لینے کا فیصلہ کیا ہے ۔