نامعلوم شخص کی فون پر ممبئی ہائی کورٹ کے چیف جسٹس کو جان سے مارنے کی دھمکی ،عدالت اور رہائش گاہ پر اضافی دستے تعینات

بین الاقوامی

ممبئی (ڈیلی پاکستان آن لائن) ممبئی ہائی کورٹ کے چیف جسٹس منجولا چیلور کو نامعلوم دہشت گرد نے ٹیلی فون پر جان سے مارنے کی دھمکی دی ہے جس کے بعد سیکیورٹی اداروں نے ہائی کورٹ اور اور ان کی رہائش گاہ کا کنٹرول سنبھالتے ہوئے حفاظتی انتظامات مزید سخت کر دیئے ہیں ۔

مزید پڑھیں:پریانکا چوپڑا کو شامی مہاجرین بچوں کے کیمپ کا دورہ کرنا مہنگا پڑگیا،تصاویر شیئر کرنے پر سخت تنقید کا سامنا

ہندوستانی نجی ٹی وی چینل ’’انڈو ٹی وی ‘‘ کے مطابق بھارت کی معروف ریاست مہاراشٹر کے دارالخلافہ ممبئی میں بھارتی فوج اور دیگر سیکیورٹی اداروں نے شہر کے داخلی اور خارجی راستوں کا کنٹرول سنبھال لیا ہے اور شہر میں داخل ہونے اور باہر جانے والے ہر شخص پر کڑی نظر رکھی ہوئی ہے اور اس کی وجہ ہے کہ کسی نامعلوم شخص نے ممبئی ہائی کورٹ کے چیف جسٹس منجولا چیلور کو ٹیلی فون پر جان سے مارنے کی دھمکی دی ہے،دھمکی آمیز کال کرنے والے نا معلوم کالر اینٹی ٹیرر سٹ فورس (اے ٹی ایس) کو کال کرتے ہوئے ممبئی ہائی کورٹ کے چیف جسٹس کو جان سے مارنے کی دھمکی دی ،جس کے بعد سیکیورٹی اداروں کی دوڑیں لگ گئیں اور انہوں نے بم سکواڈ کے دستے کے ساتھ چیف جسٹس کے کمرہ عدالت کی مکمل تلاشی لینے کے ساتھ ان کی رہائش گاہ کی سیکیورٹی بھی چیک کی اور حفاظتی انتظامات کو بڑھا دیا ۔بھارتی ٹی وی کا کہنا تھا کہ اس وقت ممبئی ہائی کورٹ اور چیف جسٹس کی رہائش گا ہ ایک قلعے کی شکل اختیار کر چکی ہے لیکن پولیس اور دیگر سیکیورٹی اداروں نے اس حوالے سے مزید کوئی بات نہیں کی اور نہ ہی کوئی بیان جاری کیا ہے۔