سری نگر میں بھارتی فوج پر بڑا حملہ،17اہلکار ہلاک،20زخمی، کئی بیرکیں جل گئیں،4حملہ آور مارے گئے

بین الاقوامی

سری نگر(مانیٹرنگ ڈیسک) سری نگر میں بھارتی فوجی ہیڈ کوارٹر پر  ہونے والے حملے میں 17  فوجی ہلاک ہوگئے ، حملہ آوروں اور بھارتی فورسز کے درمیان شدید فائرنگ کا تبادلہ  بھی ہوا ،بھارتی فوج کی جوابی فائرنگ سے چاروں حملہ آور جاں بحق ہو گئے ،حالیہ سالوں میں بھارتی فوج پر مجاہدین کے ہونے والے حملوں میں یہ سب سے بڑا حملہ بتایا جا رہا ہے ،دوسری طرف بھارتی فوج کے ڈارئیکٹر جنرل آف ملٹری آپریشن جنرل رنبیر سنگھ نے کہا ہے کہ ابتدائی تحقیات میں ثابت ہوا ہے کہ چاروں حملہ آوروں کا تعلق جیش محمد سے تھا ۔

تفصیلات کے مطابق، سری نگر کے قریب بارہ مولہ کے علاقے اڑی آرمی کےبارہ بریگیڈ ہیڈ کوارٹرز پر حملہ صبح ساڑھے  پانچ بجے ہوا ۔ بھارتی میڈیا نے اپنے فوجی ذرائع کے حوالے سے متعدد اہلکاروں کی ہلاکتوں کی تصدیق کی ہے جبکہ  خبر رساں ادارے رائٹرز کے مطابق کم از کم سترہ  فوجی مارے گئے جبکہ بیس سے زیادہ زخمی بھی  ہوئے ہیں،حملہ آوروں اورفورسز کے درمیان شدید لڑائی بھی ہوئی جبکہ پورا علاقہ فائرنگ اور دھماکوں سےگونجتا رہا۔دھماکوں کے باعث کئی بیرکوں میں آگ بھی لگ گئی جبکہ ہر طرف دھوئیں کےبادل دکھائی دیئے ۔حملے میں زخمی ہونے والے اہلکاروں کو ہیلی کاپٹر کے ذریعے ہسپتال منتقل کیا گیا۔صورتحال کے پیش نظر بھارتی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے اپنا امریکہ اور روس کا دورہ بھی ملتوی کردیا ہے ہنگامی اجلاس بھی طلب کرلیا گیا ہے۔بھارتی میڈیا کے مطابق حملہ آوروں کی تعداد چار تھی جنہیں ہلاک کردیا گیا ہے ۔دوسری طرف بھارتی وزیر دفاع منوہر پاریکر آج سرینگر کا دورہ کرینگے۔بھارتی آرمی چیف جنرل دلبیر سنگھ بھی بارہ مولہ  روانہ ہوگئے ہیں۔