امریکہ نے شامی جنگی جہاز مار گرایا، طیارہ شامی باغیوں پر بمباری کر رہا تھا:پینٹا گون

بین الاقوامی

واشنگٹن (ڈیلی پاکستان آن لائن) امریکی محکمہ دفاع پینٹاگون کے مطابق امریکی فوجی طیارے نے جنگی طیارے نے رقہ صوبے میں ایک شامی فوجی جہاز مار گرایا ہے مذکورہ طیارہ مبینہ طور پر امریکہ کی حمایت یافتہ شامی باغیوں پر بمباری کر رہا تھا۔

’ چیمپیئنز ٹرافی میں پاکستان کی فتح، پاکستان کرکٹ کے خلاف سب سے خوفناک سازش‘
امریکی محکمہ دفاع پینٹاگون سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ شامی فوج کے ایک ایس یو – 22ساختہ جنگی طیارے نے اتوار کو طبقہ قصبے کے نزدیک ان باغیوں پر بمباری کی جو امریکہ کی سربراہی میں قائم بین الاقوامی اتحاد کی مدد سے علاقے میں شدت پسند تنظیم داعش کے خلاف لڑائی میں مصروف ہیں۔ بمباری کی اطلاع ملتے ہی ایک امریکی F/A-18E سپر ہورنٹ طیارے نے شام کے SU-22 بمبار طیارے کو اس وقت نشانہ بنایا جب وہ امریکی حمایت یافتہ سیریئن ڈیموکریٹک فورسز (ایس ڈی ایف) کے ٹھکانے کے قریب بم برسا رہا تھا۔طیارے کو گرانے کے بعد شامی افواج کے اتحادی ملک روس سے رابطہ کیا تھا جس کامقصد علاقے میں کشیدگی کومزید پھیلنے سے روکنا تھا۔امریکہ کا مقصد شام اور عراق میں داعش کو شکست دینا ہے اور ان کی شامی حکومت، روس یا شامی حکومت کی حامی فورسز سے کوئی لڑائی نہیں۔لیکن اگر اتحادی فوج یا اس کی معاون فورسز کو کوئی خطرہ درپیش ہوا تو اس کا جواب دیا جائے گا۔