گھانا کی آبشار پر درخت گرنے سے 18طلبہ سمیت 19افراد ہلاک، متعدد زخمی

بین الاقوامی

کنٹامپو (صباح نیوز)افریقی ملک گھانا میں کنٹامپو کی معروف آبشار میں ایک بڑے درخت کے گرنے سے18طلبہ سمیت 19 افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہو گئے ہیں۔ناگہانی صورت حال سے نمٹنے والے شعبے کے اہلکاروں نے بتایا ہے کہ طوفان میں جب یہ عجیب حادثہ رونما ہوا اس وقت یہ لوگ وہاں تیراکی کر رہے تھے۔انھوں نے بتایا کہ بظاہر پیڑ طوفان کے سبب گرا تھا۔گھانا کی قومی فائر سروس کے ترجمان پرنس بلی انیگلیٹ نے کہا کہ یہ حادثہ برونگ اہافو علاقے میں کنٹامپو آبشار میں ہوا۔پولیس اور فائر سروس کی مشترکہ ٹیم نے جائے حادثہ کا دورہ کیا ہے تاکہ درخت میں پھنسے لوگوں کو بچایا جا سکے۔

گھانا کی میڈیا سٹار نیوز کو ایک عینی شاہد نے بتایا کہ بارش کے شروع ہوتے ہی اونچائی پر کھڑا ایک بڑا سا درخت گر گیا جس کی زد میں خوشیاں مناتے لوگ آ گئے۔مرنے والوں میں زیادہ تر وینچی سینیئر ہائی سکول کے طلبہ تھے۔ جبکہ ان میں سے بعض سیاح بھی تھے۔ ہم لوگ شاخوں کو آرے سے کاٹ کر درخت میں پھنسے باقی لوگوں کو بچانے کی کوشش میں ہیں۔

فائر سروس کے ترجمان نے غیر ملکی خبررساں ادارے کو بتایا کہ 18طلبہ جائے حادثے پر ہی ہلاک ہو گئے جبکہ دو دوسرے نے ہسپتال میں دم توڑ دیا۔انھوں نے بتایا کہ 11افراد کا علاج جاری ہے جن میں سے ایک سکول انتظامیہ کا انچارج ہے جو کہ ٹرپ کو لے کر وہاں پہنچا تھا۔بعض اطلاعات میں زخمیوں کی تعداد 20 سے زیادہ بتائی جا رہی ہے اور ان کا کنٹامپو میونسپل ہسپتال میں علاج جاری ہے۔گھانا کی وزیر سیاحت کیتھرن ابیلما افیکو نے ایک بیان میں کہا ہم سوگوار خاندانوں کے ساتھ اظہار ہمدردی کرتے ہیں اور زخمیوں کے لیے دعاگو ہیں۔