حج کے دوران پاکستان کے معاہدے ذیلی کمپنیرکے ساتھ تھے ،سعودی حکومت کا ان سے کوئی سروکار نہیں:سعودی سفیر

اسلام آباد

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) سعودی سفارتخانے نے رواں برس پاکستانی حجاج کو سہولیات کی عدم فراہمی اور ناقص انتطامات سے متعلق وزیر مذہبی امور کے الزامات کو مسترد کرتے ہوئے کہنا تھا کہ پاکستان سے اپنی مرضی سے وہاں کی کمپینیز سے معاہدے کئے تھے ،کسی بھی طرح کی پریشانی کی صورت میں سعودی حکومت اس کی ذمہ دار نہیں۔پاکستانی حکام کی ذمہ داری ہے کہ اپنے حجام کے قیام و طعام اور سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنائے.

دنیا بھر میں پناہ گزین بچوں کے حوالے سے اقوام متحدہ نے ایسے اعدادو شمار جاری کر دیئے کہ آپ کی آنکھیں بھی نم ہو جائیں گی
نجی چینل ”ایکسپریس نیوز“ کے مطابق سعودی سفارتخانے کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ وزیر مذہبی امور سردار یوسف کی جانب سے پاکستانی حجاج کو درپیش مسائل اور سہولیات فراہم نہ کرنے کے بے بنیاد الزامات مسترد کرتے ہیں اور پاکستانی حجاج کو سعودی کمپنیوں کی طرف سے سہولیات سے محروم رکھنے کا الزام بھی حقائق کے منافی ہے۔
گزشتہ روز وفاقی وزیر برائے مذہبی امور سردار یوسف نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے حج 2017 میں پاکستانی حجاج کو درپیش مسائل اور ناقص انتظامات کا ذمہ دار سعودی کمپنیوں کا ٹھہرایا تھا۔