ملکی کی ترقی پر سیاست نہیں ہونی چاہئے، مل کر آ گے بڑھا جائے، توانائی منصوبوں پر توجہ دے رہے ہیں:نوازشریف

اسلام آباد

اسلام آباد (یوا ین پی)وزیراعظم نوازشریف کا کہنا تھا کہ صوبوں کے ترقیاتی منصوبوں کی بروقت تکمیل ان کی پہلی ترجیح ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ پاکستان میں اس وقت جی ڈی پی کی شرحح 5.28 فیصد ہے۔ یہ بہت حوصلہ افزا اور قابل اطمینان ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ وفاق تمام صوبوں کی یکساں ترقی کے لئے کوشاں ہے۔ پاکستان کے معاشیی اعشاریوں کی ترقی کو عالمی اقتصادی ادارے بھی تسلیم کر رہے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ سی پیک منصوبہ پر تیزی سے کام ہو رہا ہے، چین میں بیلٹ اینڈ روڈ فوم میں ان کے ہمراہ چاروں صوبوں کے وزرائے اعلیٰ موجود تھے اور پوری دنیا نے نظارہ دیکھا کہ پاکستان کی ساری قیادت ایک صفحہ پر ہے ،ملک کی ترقی کے لیے ہمارا اتحاد دنیا کے لیے مثبت پیغام تھا، پاکستان کی ترقی کے لئے مل کر آ گے بڑھا جائے۔ ان کا کہنا تھا کہ یہ پہلی مرتبہ ہوا ہے کہ حکومت نے صوبائی حکومتوں کے ترقیاتی بجٹ میں تین گنا اضافہ کیا ہے جو ایک ریکارڈ ہے۔ وزیراعظم نے کہا کہ ملکی کی ترقی پر سیاست نہیں ہونی چاہئے۔ چاروں صوبوں کو یکساں ترقی کے مواقع مل رہے ہیں۔ اس کو سیاست کی نذر کر کے عوام کو نقصان نہیں پہنچانا چاہئے۔ ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کے اقتصادی اعشاریوں میں نمایاں بہتری آئی ہے۔ عالمی مالیاتی ریٹنگ ادارے اقتصادی اعشاریوں میں بہتری کا اعتراف کر رہے ہیں۔

وہ قومی اقتصادی کونسل کے اجلاس کی صدارت کررہے تھے جس میں  چاروں صوبوں کے وزرائے اعلیٰ، متعلقہ وفاقی وزراء، وزیراعظم آزاد جموں کشمیر اور وزیراعلیٰ گلگت بلتستان نے شرکت کی۔ اجلاس میں وفاق اور صوبوں کا ما لی سال 2017-18ء کا تر قیاتی بجٹ منظوری کے لئے پیش کیا گیا۔ وفاق اور صوبوں کے لئے آئندہ مالی سال کے دوران 2113 ارب روپے کا ترقیاتی بجٹ رکھا گیا ہے۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ پاکستان تیزی سے ترقی کرنے والی معیشتوں میں شامل ہے۔ ملکی ترقی کے لئے وفاقی و صوبائی حکومتیں ہم آہنگی کے ساتھ کام کر رہی ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ توانائی منصوبوں پر توجہ دے رہے ہیں نا صرف توانائی کی پیدوار بلکہ سستی توانائی کی فراہمی بھی ہماری ترجیح ہے، توانائی کے ساتھ صارفین کو ارزاں نرخوں پر بجلی فراہمی ہماری ترجیح ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ مختلف ذرائع سے بجلی پیدا کرنے کے منصوبوں پر توجہ دے رہے ہیں۔ ہم ایل این جی، کوئلہ، پن بجلی، شمسی اور ہوا سے بجلی پیدا کر رہے ہیں جبکہ ترقی کے لیے شاہراتی اور مواصلاتی نیٹ ورکس پر توجہ دے رہے ہیں۔ بنیادی ڈھانچہ ترقی کے لئے بنیادی حیثیت رکھتا ہے۔ حکومت شاہراہوں اور مواصلاتی نیٹ ورکس پر توجہ دے رہی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ترقیاتی منصوبے سیاست کی نذر نہیں ہونے چاہئیں۔ پاکستان کی ترقی سے سب کی خوشحالی ہے۔ ترقی منصوبہ بندی میں عوامی بہبود کو خاص طور پر مدنظر رکھا جائے۔ آئندہ مالی سال میں پی ایس ڈی پی میں صوبوں کے حصہ میں اضافہ کیا گیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ 2012-13ء کی نسبت آئندہ مالی سال میں صوبوں کو تین گنا زیادہ حصہ ملے گا۔ دوسرے صوبوں کی طرح فاٹا، آزادکشمیر اور گلگت بلتستان بھی وفاقی حکومت کے لئے اہم ہیں۔ دیہی ترقی کے لئے صحت، تعلیم اور دوسرے سماجی شعبوں پر خصوصی توجہ دی جائے۔