بدترین لوڈ شیڈنگ جاری ، 4 سالوں میں بجلی کی پیداوار میں 6133 میگا واٹ کا اضافہ ہوا ،وزارت بجلی و پانی کا انوکھا دعویٰ سامنے آگیا

اسلام آباد

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن ) ملک بھر میں بجلی کا بحران جاری ہے ،شہروں اور دیہاتوں میں کئی کئی گھنٹے بجلی کی ہونے والی آنکھ مچولی نے عام شہریوں کی زندگی اجیرن بنا کر رکھی ہوئی ہے،ایسے میں وزارت پانی و بجلی کے ترجمان نے انوکھا دعویٰ کرتے ہوئےکہاہے کہ بجلی کی پیداوار میں2013 کے بعد سے اب(2017) تک 6 ہزار 1سو 33 میگا واٹ کا اضافہ ہوا  ہے،جبکہ اسی عرصے کے دوران 5567 میگا واٹ نئی بجلی سسٹم میں شامل کی گئی ،مئی2013 میں بجلی کی طلب 15 ہزار 899 میگا واٹ تھی جو مئی2017میں بڑھ کر 20 ہزار 807 میگا واٹ ہو گئی۔

وزارت پانی و بجلی کے ترجمان کے مطابق بجلی کی پیداوار میں2013 سے اب تک 6 ہزار 1سو 33 میگا واٹ کا اضافہ ہوا ،جبکہ اسی عرصے کے دوران دومراحل میں 5567 میگا واٹ بجلی سسٹم میں شامل کی گئی ، جس میں نئی پیداوار کی 1420 میگا واٹ بھی شامل ہے جو آزمائش کے مختلف مرحلوں میں ہے۔ مئی2013 میں بجلی کی طلب 15 ہزار 899 میگا واٹ تھی جو مئی2017میں بڑھ کر 20 ہزار 807 میگا واٹ ہو گئی،ترجمان کے مطابق گزشتہ 4سالوں میں بجلی کی طلب میں بڑی مقدارمیں اضافہ ہوا جب کہ بجلی کی پیداوار بہتر ہونے کی وجہ سے شارٹ فال میں کمی آئی ۔2013 میں ملک میں بجلی کی پیداوار کا شارٹ فال کی شرح 44.6 فیصد تھی جو 2017 میں کم ہو کر 20.3 فیصد ہو گئی ہے،اسی طرح بجلی کی پیداوار کی شرح 2013 میں 59.4 فیصد تھی جو 2017 میں بڑھ کر 72.5 فیصد ہو گئی ہے، ترجمان کے مطابق نئے پاور پلانٹس پائپ لائن میں ہیں جن سے ہزاروں میگاواٹ بجلی نیشنل گرڈ میں شامل کی جائے گی ،2018میں ملک سے لوڈ شیڈنگ ختم کردی جائے گی ۔دوسری طرف ملک میں بجلی کا بحران جاری ہے جبکہ دیہاتوں میں اب بھی 14سے 16 گھنٹے کی لوڈ شیڈنگ ہو رہی ہے جس سے لوگوں کی زندگی اجیرن ہو کر رہ گئی ہے ۔