اگر میرا دشمن بھی کراچی کو مسائل کی دلدل سے نکال سکتا ہے تو میں ان کا ساتھ دوں گا: مصطفی کمال

کراچی

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن)مصطفی کمال نے کہا ہے کہ دشمن بھی عوامی مسائل کے لیے باہر نکلے گا تواس کوسپورٹ کریں گے ہم جماعت اسلامی کے احتجاج اور 23 اپریل کو ایم کیو ایم پاکستان کی ریلی کی بھی تائید کرتے ہیں۔

پانامہ کیس فیصلے میں جسٹس آصف سعید کھوسہ کی13تنقیدی باتیں
کراچی پریس کلب کے باہر میڈیاسے گفتگو کرتے ہوئے چیئرمین پاک سرزمین پارٹی مصطفی کمال نے کہا ہے کہ آج احتجاج کا 15 واں روز ہے اور پہلا مرحلہ کامیابی کے ساتھ پوراکرلیا ہے جس کے دوران میں نے اپنا واضح پیغام عوام تک پہنچا دیا۔ پاک سرزمین پارٹی نے سیاست کو سیاست برائے مخالفت سے بدل کر عوامی خدمت بنا دیا ہے، پی ایس پی اپنی بدترین مخالف جماعت کے میئر کیلئے اختیار مانگ رہی ہے۔

شام میں حکومتی افواج کے کیمپ پر باغیوں کا حملہ، روس کا فوجی مشیر مارا گیا
مصطفی کمال نے پی ایس کے احتجاج کے دوسرے مرحلے کااعلان کرتے ہوئے کہا کہ اس مرحلے کے دوران پاک سرزمین پارٹی کا ایک ایک کارکن ہر گھر پر دستک دے گا اور میرا پیغام پہنچائیں گے جس کے بعد 10لاکھ افراد لے کرسڑکوں پرنکلیں گے اور محلات تک مارچ کریں گے۔ تمام پولیس والے بھی ساتھ ہونگے کیونکہ ان کے بچوں کے مستقبل کا بھی سوال ہے۔ 10 لاکھ افراد میری بتائی ہوئی جگہ پرنکلیں گے اور آدھے گھنٹے میں مسائل حل ہوجائیں گے اور اگر مسائل حل نہیں ہوئے تو پیپلز پارٹی کو ان کا حکومت کرنا محال ہوجائے گا۔ہم عوام کو کراچی کے مسائل کے حل کے لئے بلا رہے ہیں کسی کو ووٹ، کھالیں، زکوٰة اور فطرانہ مانگنے کے لئے نہیں بلا رہے۔

آئی پی ایل : ممبئی انڈینز نے کنگز الیون پنجاب کو 8وکٹوں سے شکست دیدی

رہنما ءپاک سر زمین پارٹی نے کہا کہ پاک سرزمین پارٹی نے کراچی کے مسائل حل کرنے کے لیے 16 مطالبات پیش کیے ہیں جن میں 8 مطالبات میئر کے اختیارات سے متعلق ہیں حالانکہ میئر ہماری جماعت کا نہیں ہے۔انہوں نے کراچی کے ٹرانسپورٹرز سے مطالبہ کیا کہ وہ ان کے بتائے ہوئے مقام تک فری ٹرانسپورٹ مہیا کریں۔