عزیر بلوچ کے پاس 9 موبائل فون، جیل میں بیٹھ کر گینگ چلا رہے ہیں ،اس معاملے میں رینجرز بے بس ہے: مظہر عباس کا دعویٰ

کراچی

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) سینئر تجزیہ کار مظہر عباس نے دعویٰ کیا ہے کہ عزیر بلوچ کے پاس 9 موبائل فون ہیں اور وہ جیل میں بیٹھ کر ہی اپنا گینگ چلا رہے ہیں ، اس حوالے سے جب انہوں نے رینجرز کے ایک اعلیٰ عہدیدار سے گفتگو کی تو اس نے اس بارے میں بے بسی کا اظہار کیا۔
نجی ٹی وی جیو نیوز کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے مظہر عباس کا کہنا تھا کہ ڈاکٹر عاصم حسین کی گرفتاری کی وجہ سے مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی میں سخت تناﺅ کی کیفیت ہے اور یہی وجہ ہے سابق صدر آصف علی زرداری بھی اس معاملے کو بہت سیریس لیتے ہیں۔

اسلام آباد ہائی کورٹ نے شرجیل میمن کی 5اپریل تک حفاظتی ضمانت منظور کر لی
انہوں نے کہا کہ شرجیل میمن اسلام آباد وفاقی حکومت کے علاقے میں اس لیے آئے کیونکہ پیپلز پارٹی کو کراچی میں انہیں حفاظتی ضمانت نہ ملنے کا خطرہ تھا جو کہ سندھ حکومت کی بہت بڑی ناکامی ہے۔
مظہر عباس نے دعویٰ کیا کہ ان کی سندھ رینجرز کے ایک اعلیٰ عہدیدار سے عزیر بلوچ کے معاملے پر گفتگو ہوئی جس میں رینجرز اہلکار نے انہیں بتایا کہ عزیر بلوچ کے پاس جیل میں ہی 9 موبائل فون موجود ہیں اور وہ ادھر سے بیٹھ کر اپنا گینگ چلا رہے ہیں، اس سلسلے میں ہم کچھ بھی نہیں کر سکتے۔

عدالت نے لیاری گینگ وار کے سرغنہ عزیر بلوچ اور امین بلیدی پر ترمیمی فرد جرم عائد کر دی
سینئر تجزیہ کار کا کہنا تھا کہ عزیر بلوچ کے کیس سمیت دیگر اہم کیسز میں کوئی پیشرفت نہیں ہورہی جس کی ایک اہم وجہ کراچی میں کام کرنے والے سرکاری اداروں میں موجود اندرونی سرد جنگ ہو سکتی ہے۔