تحریک انصاف امریکہ کی جانب سے مقبوضہ بیت المقدس کو دارالحکومت تسلیم کرنے کیخلاف پنجاب اسمبلی میں قراردادلے آئی

لاہور

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن)تحریک انصاف امریکہ کی جانب سے مقبوضہ بیت المقدس کو دارالحکومت تسلیم کرنے کیخلاف پنجاب اسمبلی میں قرارداد لے آئی، قراردادپنجاب اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر میاں محمودالرشید نے جمع کرائی۔

پنجاب اسمبلی میں جمع کرائی گئی قرارداد کے متن  میں کہا گیا ہے کہ  امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے اعلان کی مذمت کرتے ہوئی اسے اشتعال انگیزی قرار دیا گیا ہے۔ قرارداد میں کہا گیا ہے کہ امریکی اقدام مشرق وسطیٰ کے امن کیخلاف گہری سازش ہے، صدر ٹرمپ کے اعلان نے اسلامی دنیا کو ایک گہرا زخم دیا۔ قرارداد میں مطالبہ کیا ہے کہ وفاقی حکومت مسلم امہ کے ساتھ ملکر عالمی برادری کے سامنے احتجاج کرے اور اس مسئلے کو اقوام متحدہ اور آئی سی میں بھرپور انداز میں اٹھایا جائے اور امریکہ کو فیصلہ واپس لینے پر مجبور کبا جائے۔

یہ بھی پڑھیں:شیخ رشید کا طاہر القادری سے ٹیلی فونک رابطہ ،باقرنجفی رپورٹ پر تبادلہ ،حکومت کے خلاف جدوجہد تیز کرنے پر اتفاق

قبل ازیں احاطہ اسمبلی میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے میاں محمودالرشید نے کہا کہ حکومت بروقت انتخابات نہ کرانے کے ایجنڈے پر کام کر رہی ہے، مسلم لیگ ن نے ملک میں تناؤ کا ماحول بنا رکھا ہے جو انتہائی خطرناک رجحان ہے۔ انکا کہنا تھا کہ اس سارے عمل میں پیپلز پارٹی پس پردہ حکومت کی حمایت کر رہی ہے، کیونکہ دونوں جماعتوں کو بخوبی اندازہ ہے کہ بروقت انتخابات میں انکے ہاتھ کچھ نہیں آنے والا ۔ایک سوال کے جواب میں اپوزیشن لیڈر نے کہا کہ سانحہ ماڈل ٹاؤن پر کوئی سیاست نہیں کر رہا، یہ انصاف کی تحریک ہے، اس لئے تحریک انصاف نے مظلوم خاندان کا ساتھ دینے کا اعلان کر رکھا ہے۔

ڈیلی پاکستان کا یو ٹیوب چینل سبسکرائب کرنے کے لیے یہاں کلک کریں