پسند کی شادی کرنیوالی 15 سو لڑکیوں نے ایک برس بعد ہی طلاق لے لی

لاہور

لاہور( ویب ڈیسک)پسند کی شادیاں کرنے والی 1500 لڑکیوں نے شادی کے ایک برس بعد ہی طلاقیں لے لیں۔قانونی ماہرین نے پسند کی شادیوں کو معاشرے کے لئے بوجھ قرار دے دیا ہے۔رواں برس میں جنوری سے نومبر تک لاہور کی سول عدالتوں نے 2000 خواتین کوطلاق کے سرٹیفکیٹ جاری کر دئیے ہیں جن میں 1500 خواتین پسند کی شادی کرنے والی شامل ہیں۔صوبائی دارالحکومت لاہور کی سول عدالتوں نے 2000 خواتین کوطلاق کے سرٹیفکیٹ جاری کر دئیے ہیں۔ ان عدالتوں نے یہ سرٹیفکیٹس یکم جنوری 2017ءسے یکم نومبر 2017ءکے درمیانی عرصے کے دوران جاری کئے ہیں طلاق لینے والی ان 2000 خواتین میں سے 1500 نے اپنی مرضی سے شادیاں کیں تھیں بتایاگیا ہے کہ طلاق لینے والی ان خواتین کی علیحدگی کی وجہ گھریلو ناچاقیاں ہیں۔