عدالت نے سوئی نادرن گیس کے ایم ڈی سمیت 7افسر اشتہاری قرار دے دیئے

لاہور

لاہور(نامہ نگار)ماڈل ٹاﺅن کچہری کی خاتون جوڈیشل مجسٹریٹ بشریٰ انورنے بطور ملزم عدالت میں پیش نہ ہونے پر مینجنگ ڈائریکٹر سوئی نادرن گیس پائپ لائن اور ریجنل ڈائریکٹر سوئی نادرن گیس پائپ لائن لیمیٹڈ سمیت 7افسروں کو عدالتی اشتہاری قرار دے دیا ۔

جوڈیشل مجسٹریٹ نے سوئی ناردن گیس پائپ لائن لیمیٹڈ کے افسران کو عدالت میں پیش نہ ہونے پر اشتہاری قرار دیتے ہوئے پولیس کو حکم دیا کہ ملزمان کو جلد از جلد گرفتار کر کے عدالت میں پیش کیا جائے، درخواست گزار یاسین بٹ کے وکیل ملک مدثر نے عدالت میں موقف اختیار کررکھا ہے کہ سوئی نادرن گیس پائپ لیمیٹڈکے افسران چوری اور دھمکیاں دینے کے کیس میں بطور ملزم پیش نہیں ہو رہے ہیں،سوئی نادرن گیس پائپ لائن لیمیٹد کے افسران کے خلاف شہری کو دھمکیاں دینے پر استغاثہ زیر سماعت ہے،سوئی نادرن گیس پائپ لیمیٹڈکے افسران کو عدالت کی جانب سے طلبی کے نوٹس بھی بھجوائے جا چکے ہیں اور عدالتی نوٹس کے باوجود پیش نہ ہونے پر وارنٹ گرفتار بھی جاری ہو چکے ہوئے ہیں ،ان کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی کی جائے عدالت نے دلائل سننے کے بعد عدالت میں پیش نہ ہونے پر مینجنگ ڈائریکٹر سوئی نادرن گیس پائپ لیمیٹڈ،ریجنل ڈائریکٹر سوئی نادرن گیس پائپ لائن لیمیٹڈ،عبدالرﺅف بلنگ آفیسر اچھرہ،راجہ معظم سینئر سپروائزر یو ایف جی،یوسف ذاکر اسلام ایسوسی ایٹ انجینئر یو ایف جی،ساجد کمال انسپکٹر اچھرہ سوئی نادرن گیس پائپ لائن،بشیر بٹ میٹر انسٹالنگ افیسر، شرافت علی ایسوسی ایٹ انجینئر اور نذیر عالم افیسر سوئی نادرن گیس پائپ لائن لیمیٹڈ گرو مانگٹ روڈ کو عدالتی اشتہاری قرار دے دیاہے۔