جوڈیشل کمشن نے لاہور ہائی کورٹ کے7ایڈیشنل ججوں کے عہدہ میں ایک سال توسیع کی منظوری دے دی دیگر7سبکدوش

لاہور

لاہور(نامہ نگارخصوصی )جوڈیشل کمشن نے لاہور ہائی کورٹ کے 14میں سے 7ایڈیشنل ججوں کے عہدہ میں ایک سال کی توسیع کی منظوری دے دی جبکہ دیگر7ایڈیشنل ججوں کوسبکدوش کردیا گیا ہے ۔جن ججوں کے عہدہ میں ایک سال کی توسیع کی گئی ہے ان میں مسٹرجسٹس مجاہد مستقیم، مسٹرجسٹس طارق افتخار احمد ،مسٹرجسٹس اسجد جاوید گھرال ،مسٹرجسٹس طارق سلیم شیخ،مسٹرجسٹس جواد حسن،مسٹرجسٹس مزمل اختر شبیراور مسٹرجسٹس چودھری عبدالعزیز شامل ہیں۔جو جج کنفرم نہ ہونے کے باعث سبکدوش ہوگئے ہیں ان میں جسٹس محمد بشیر پراچہ،جسٹس عبدالستار ،جسٹس حبیب اللہ عامر ،جسٹس احمد رضا گیلانی، جسٹس مدثر خالد عباسی ، جسٹس اورنگ زیب عبدالرحمن اورجسٹس آغا محمد علی شامل ہیں۔یہ 14جج 26نومبر 2016ءکو لاہور ہائی کورٹ میں ایک سال کے لئے ایڈیشنل جج مقرر ہوئے تھے ،ان ججوں کی کنفرمیشن کے معاملہ پر چیف جسٹس پاکستان مسٹر جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں جوڈیشل کمشن کا اجلاس منعقد ہوا جس میں چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ سیدمنصور علی شاہ ، ہائیکورٹ کے سینئرترین جج جسٹس یاور علی ،وزیر قانون زاہد حامد، صوبائی وزیرقانون ،اٹارنی جنرل پاکستان اور بار کے نمائندہ وکلا ءنے شرکت کی ۔جوڈیشل کمشن نے 7ججوں کے عہدہ میں ایک سال کی توسیع کی منظوری دیتے ہوئے اس بابت اپنی سفارشات پارلیمانی کمیٹی کو بھجوا دی ہیں۔