روہنگیا مسلمانوں کا قتل عام انتہائی تکلیف دہ اور قابل مذمت ہے: ڈاکٹر ظفر معین نصر

لاہور

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)وائس چانسلر پنجاب یونیورسٹی ڈاکٹر ظفر معین نصر نے کہا ہے کہ روہنگیا مسلمانوں کا قتل عام انتہائی تکلیف دہ اور قابل مذمت ہے، برمی حکومت انسانیت سوز مظالم کے ذریعے برمی مسلمانوں کا خون بہا رہی ہے جب کہ اقوام عالم کی خاموشی امن کے ٹھیکداروں کے کردار پر ایک سوالیہ نشان ہے۔پنجاب یونیورسٹی کے طلبہ وطالبات، اساتذہ اور دیگر ملازمین کی جانب سے برمی مسلمانوں سے اظہار یک جہتی کرتا ہوں ۔ انہوں نے روہنگیا مسلمانوں کے مسئلے پر اقوام متحدہ اور او آئی سی کا ہنگامی اجلاس بلانے کا مطالبہ بھی کیا۔


تفصیلات کے مطابق اسلامی جمعیت طلبہ جامعہ پنجاب کے زیر اہتمام برمی مسلمانوں سے اظہار یکجہتی کے لئے احتجاجی ریلی کا اہتمام کیا گیا، جس میں وائس چانسلر یونیورسٹی، اساتذہ ، طلبہ وطالبات اور یونیورسٹی ملازمین کی کثیر تعداد نے شرکت کی ۔

اس موقع پر وائس چانسلر ڈاکٹر ظفر معین نصر نے خطاب کرتے ہوئے اقوام عالم سے مطالبہ کیا کہ وہ برمی مسلمانوں پر ہونے والے مظالم کو بند کرانے کے لئے کردار ادا کریں۔

احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے اسلامی جمعیت طلبہ پنجاب یونیورسٹی کے ناظم اسامہ اعجاز کا کہنا تھا کہ روہنگیا مسلمانوں کا قتل عام انسانیت کا خون ہے، آنگ سان سوچی کی ہٹ دھرمی اور ضد عالمی امن کے ٹھکیداروں کے لئے لمحہ فکریہ ہے۔ برمی مسلمانوں پر ہونے والے مظالم پر چنگیز خان اور ہلاکو خان کی روح بھی کانپ اٹھے گی مگر اقوام متحدہ اور انسانی حقوق کے عالمی اداروں کے کانوں پر جوں تک نہیں رینگتی۔

احتجاجی مظاہرے میں شریک طلبہ وطالبات نے حکومت پاکستان سے مطالبہ کیاکہ وہ برمی سفیر کو ملک بد ر کرکے میانمار سے سفارتی تعلقات منقطع کرے اور اسلامی ممالک کے پلیٹ فارم پر اس مسئلے کو اجاگر کرنے کے لئے کردار ادا کرے۔