زیادتی کے بعد قتل ہونے والی خاتون کے تین بچے نانا نانی کی تحویل سے بازیاب ،عبوری طور پر باپ کے حوالے

لاہور

لاہور ( آن لائن) لاہور ہائیکورٹ نے زیادتی کے بعد قتل ہونے والی خاتون کے تین بچوں کو نانا نانی کی تحویل سے بازیاب کرا کے عبوری طور پر باپ کے حوالے کر دیا۔

لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس شہباز رضوی نے کیس کی سماعت کی۔درخواست گزار محمد عنائت کے وکیل میاں شکیل احمد نے عدالت کو بتایا کہ اس کی بیوی کو زیادتی کے بعد قتل کر دیا گیا جس کی وجہ سے اس کے تینوں بچے ماں کی گود سے محروم ہو گئے۔انہوں نے کہا کہ بیوی کے قتل کے بعداس کے تینوں بچے اسکے ساس اور سسر کے پاس ہیں جس کی وجہ سے بچے اپنے باپ کے سایہ شفقت سے بھی محروم کر دئیے گئے ہیں۔عدالتی حکم پر درخواست کے چار سالہ بیٹے اور دو چھوٹی بیٹیوں کو عدالت میں پیش کیا گیا۔جس پر عدالت نے عبوری طور پر تینوں بچے باپ کے حوالے کرتے ہوئے فریقین کے وکلاء کو مزید بحث کے لئے طلب کر لیا۔