گرفتار کارکنوں کو رہا اور قائدین کے گھروں پر بلا جواز چھاپوں کا سلسلہ بند نہ ہوا تو ملک گیر تحریک شروع کریں گے ،وزیر اعظم اور دیگر اعلیٰ حکام غیر قانونی کارروائیوں کا نوٹس لیں:تحفظ ختم نبوت فورم

لاہور

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)تحفظ ختم نبوت فورم کے مرکزی رہنماؤں نے گستاخانہ مواد کے خلاف درج مقدمات کے مدعیان اور گواہوں کو  پنجاب پولیس کے اہم ادارےکی طرف سے حراساں کرنے ،کارکنوں اور رہنماؤں کے گھروں پر بلا جواز چھاپوں ،چادر چار دیواری کے تقدس کو پامال اور 3 کارکنوں کو گذشتہ 7 روز سے لاپتا کرنے کی شدید مذمت کرتے ہوئے وزیر اعظم ،آرمی چیف ،چیف جسٹس  سپریم کورٹ ،وزیر اعلیٰ پنجاب اور حساس اداروں کے سربراہوں سے اس حساس اور سنگین ترین مسئلے کا فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے ۔

تفصیلات کے مطابق تحفظ ختم نبوت فورم کے مرکزی قائدین رانا طٖفیل رضا ،شیخ بدر عالم  ،بیرسٹر  محمد عمران ، سینئر ایڈووکیٹ شیخ نواز ،سیف اللہ ایڈووکیٹ ،آفتاب فرخ ،ملک محمد ندیم رمضان جان ایڈووکیٹ اور لاہور  ہائی کورٹ بار کے سیکرٹری فنانس  ظہیر بٹ نے لاہور پریس کلب میں پر ہجوم پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ تحفظ ختم نبوت فورم  ملکی آئین اور قانون کے دائرے میں رہتے ہوئے ملک میں تحفظ ختم نبوتﷺ اور سوشل میڈیا پر گستاخانہ مواد  شائع کرنے والے کے خلاف اپنی آئینی اور قانونی جدوجہد کر رہی ہے ،ہم نے گستاخانہ مواد اور تحریف شدہ قرآنی تفاسیر شائع کرنے والوں کے خلاف قانون کے مطابق مقدمات درج کرائے ہیں لیکن پولیس اور ایک ادارے میں مخصوص اقلیت کے حامی  ہمارے قانونی عمل کو روکنے کے لئے غیر قانونی اقدامات کرتے ہوئے آئین اور ملک پاکستان کے قانون کی توہین کر رہے ہیؓں ،گذشتہ جمعہ کی رات سے تحفظ ختم نبوت فورم کے قائدین اور کارکنوں کے گھروں پر بلا جواز اور غیر قانونی چھاپوں کا سلسلہ جاری ہے جبکہ جن کارکنوں نے پولیس خدشات کو دور کرنے کے لئے رضا کارانہ گرفتاری دی گئی انہیں بھی لاپتا کر دیا گیا ہے جبکہ کہیں پر بھی ہماری شنوائی نہیں ہو رہی۔انہوں نے اعلیٰ حکام سے مطالبہ کیا کہ تحفظ ختم نبوت فورم کے 3 کارکنان محمد عرفان ،جہانگیر اور محمد خان کو بلا جواز گرفتار کر کے نا معلوم مقام پر منتقل کیا گیا ہے کو فوری رہا کیا جائے اور فورم کے قائدین اور کارکنان کے گھروں پر بلا جوا ز چھاپوں کا سلسلہ بند کیا جائے ،اگر پولیس اور اس کے اداروں نے اپنی غیر قانونی کارروائیوں کا سلسلہ بند نہ کیا تو 25 مئی کو آل پارٹیز کانفرنس  طلب کر کے ملک گیر تحریک کا فیصلہ کیا جائے گا ،اس سلسلہ میں تمام سیاسی و مذہبی جماعتوں اور انسانی حقوق کی تنظیموں سے بھی رابطے کیئے جا رہے ہیں ۔ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے ان راہنماؤ ں کا کہنا تھا کہ تحفظ ختم نبوت فورم کا کسی بھی کالعدم تنظیم سے کوئی تعلق نہیں ،اس فورم میں ملک گیر سطح پر ہزاروں وکلا شامل ہیں جو آئینی اور قانونی طور پر اسلام دشمن قوتوں اور توہین اسلام کرنے والوں کے خلاف آئینی و قانونی جدوجہد کر رہے ہیں جبکہ اس فورم میں بھی کسی ایسے شخص کو رکنیت نہیں دی جاتی جس کا کسی بھی کالعدم تنظیم سے کوئی تعلق ہو ۔