مطمئن کریں ،احتساب کے بیان پر وزیراعلیٰ کے خلاف کیسے کارروائی ہوسکتی ہے؟ہائی کورٹ کی درخواست گزار کو ہدایت

لاہور

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے وزیراعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف کی نااہلی کے لئے دائر درخواست کی سماعت 26اپریل تک ملتوی کرتے ہوئے درخواست گزار شہری محمود اختر نقوی کو ہدایت کی ہے کہ وہ عدلیہ اور فوج کے خلاف وزیراعلیٰ کی تقریر کا ویڈیو ریکارڈ پیش کریں.

حافظ سعید نظر بندی کیس ،ہائی کورٹ نے حکومت کو لمبی تاریخ دینے سے انکار کردیا،بحث کا حکم

جسٹس عابد عزیز شیخ نے درخواست گزار کو اس درخواست کے قابل سماعت ہونے کے بارے میں عدالت کو مطمئن کرنے کا حکم بھی دیا ہے ۔درخواست گزار کا موقف ہے کہ خواتین کے عالمی دن کے موقع پر شہباز شریف نے ججز اور جرنیلوں کی کرپشن پر احتساب کا بیان دیا ہے، شہباز شریف کا یہ بیان عدلیہ اور فوج کی تضحیک کے مترادف ہے۔ درخواست گزار کا موقف ہے کہ آئین کے آرٹیکل 63کے تحت میاں شہباز شریف کونااہل قرار دیا جائے ،عدالت نے سماعت 26 اپریل تک ملتوی کرتے ہوئے درخواست گزار کووزیر اعلیٰ کی تقریر کا ریکارڈ پیش کرنے کا حکم دیا ہے جبکہ درخواست کے قابل سماعت ہونے پر بھی مزید دلائل طلب کر لئے ہیں۔یاد رہے کہ عدالت عالیہ اسی نوعیت کی ایک درخواست پہلے ہی مسترد کرچکی ہے۔