موٹروے نجی کمپنی کو دینے سے قومی خزانہ کو 205 ارب روپے کا نقصان

لاہور

لاہور(آن لائن) سابق وزیر مملکت انصاف و پارلیمانی امور مہرین انور راجہ نے کہا ہے کہ اسلام آباد لاہور موٹروے نجی کمپنی کو دینے سے قومی خزانہ کو 205 ارب روپے کا نقصان ہوا ہے ۔

نجی کمپنی 20 سال تک موٹروے پر چلنے والی گاڑیوں سے ٹیکس وصول کرے گی، ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ موٹروے نجی کمپنی کو دینا غیر قانونی اقدام ہے جس کی تحقیقات ہونی چاہیے، جس کمپنی کو یہ ٹھیکہ دیا گیا ہے اس کمپنی نے تو درخواست بھی نہیں دی تھی لیکن پھر بھی اس کمپنی کو ٹھیکہ دے دیا گیا ہے۔

کے الیکٹرک صارفین کیلئے بجلی ساڑھے 3روپے فی یونٹ کم ،2023ءتک 12روپے 7پیسے کا نیا ٹیرف مقرر

انہوں نے کہاکہ حکومت من مانیاں کر رہی ہے، قو می خزانہ کو نقصان پہنچایا جا رہا ہے، عوام کے مسائل حل کرنے کے لئے کچھ نہیں کیا جا رہا ہے، قومی وسائل کا تحفظ نہیں کیا جا رہا، عوام مشکلات کا شکار ہیں لیکن ان کی مشکلات حل کرنے کے لئے حکمران سنجیدہ نہیں ۔