ملتان کے نوجوان نے منفرد سوشل سائٹ متعارف کرادی

ملتان

ملتان (ویب ڈیسک)ملتان کے نوجوان نے گستاخانہ خاکے‘نازیباموادکواپ لوڈہونے سے روکنے والی سوشل میڈیاویب سائٹ متعارف کروادی‘نیوملتان کے رہائشی نوجوان اویس شہزادنے فیس بک‘ ٹویٹر کے طرزکی نئی سوشل میڈیاسائٹ بنائی ہے جس کا مقصد سوشل میڈیا سے بہترین فیچرزپرمبنی سوشل نیٹ ورکنگ جیسی سہولیات فراہم کرناہے‘اس سوشل نیٹ ورکنگ سائٹ پرتوہین رسالت اوراسلام سے متعلق نفرت انگیزمواداپ لوڈ نہیں کیا جا سکتا‘ اویس شہزاد نے 2013میں برطانیہ کی ہاروڈ یونیورسٹی سے ڈگری لی اورملتان میں اپناسافٹ ویئرہاﺅس قائم کیا‘وہ پرائیویٹ کمپنیوں کومختلف سافٹ ویئرز اور پروگرامز بنا کر دیتے ہیں‘ پسماندہ علاقے جنوبی پنجاب کے رہائشی نے دن رات اپنی لگن سے متبادل سوشل میڈیاسائٹ بنانے پرکام کیاجس کا مقصد اسلام کیخلاف نفرت سے روکنا ہے‘ اس سوشل میڈیا سائٹ فیچرزکے اعتبار سے تمام معروف سوشل ورکنگ سائٹس سے بہتر ہے۔

روزنامہ جنگ کے مطابق اویس شہزاد نے بتایاکہ اس وقت پوری دنیا میں ایسی کوئی سوشل ویب سائٹ نہیں جوآرٹیفشل انٹیلی جنس سے نفرت انگیز‘ گستاخانہ اورنازیباموادکواپ لوڈ ہونے سے روک سکے لیکن میری سول میڈیا ویب سائٹ ایسے کسی موادکواپ لوڈ ہونے سے روکنے کے ساتھ ساتھ خودبخودرپورٹ کرتی ہے جس کے باعث دنیا کی منفرد سائٹ ہےاور یہ بہت جلد اسلامی دنیا کی معروف سائٹ بن جائے گی۔انہوں نے بتایا کہ ان کے والداسلامی سکالرہیں‘گھرمیں اسلامی رجحان کے باعث ان میں جستجو تھی کہ وہ کوئی ایسی سوشل نیٹ ورکنک سائٹ متعارف کروائیں۔ آئندہ وہ اس سے بھی بہتر سافٹ ویئرترتیب دینگے اوردنیامیں پاکستان کانام روشن کرینگے۔