مقبوضہ وادی میں طلبہ وطالبات پر بھارتی فوج کی دہشت گردی، آزاد کشمیر کے طلبہ نے20روزہ احتجاجی تحریک چلانے کا اعلان کردیا

مظفرآباد

مظفرآباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کی جانب سے طلبہ وطالبات پر تشدد کے خلاف آزاد کشمیر کے طلبہ بھی میدان میں نکل آئے اور20روزہ یکجہتی مہم چلانے کا اعلان کردیا۔ ریاست بھر میں چلائی جانے والی مہم کا سلوگن One Slogan One Track Go India Go Back" رکھ دیا۔

کلبھوشن یادیو کیس، پاکستان عالمی عدالت میں ایڈہاک جج کی تقرری کے لئے کوشاں، 6ہفتوں میں دوبارہ سماعت کی درخواست دی جائے گی: نجی ٹی وی کا دعویٰ
تفصیلات کے مطابق مقبوضہ کشمیر میں بھارتی جارحیت کے خلاف اسلامی جمعیت طلبہ کشمیر وگلگت بلتستان نے ریاست بھر میں یکجہتی کشمیر مہم کا آغاز کردیا ہے۔ مہم کے دوران گلگت ، کوٹلی ، چڑہوئی ، میرپور ، پلندری ، دھیر کوٹ ، راولا کوٹ اور مظفر آباد میں احتجاجی ریلیوں کا انعقاد کیا گیا۔

ان ریلیوں کی قیادت چئیر مین حریت کانفرنس آزاد کشمیر غلام محمد صفی، امیر جماعت اسلامی آزاد کشمیر عبد الرشید ترابی ، ناظم اسلامی جمعیت طلبہ جموں کشمیر و گلگت بلتستان آفتاب احمد اور یگر سیاسی و سماجی شخصیات نے کی ۔


ریلیوں کے شرکاءنے بھارتی مظالم کے خلاف نعرے بلند کئے ، جبکہ ہاتھوں میں بینرز اور پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے جن پربھارتی مظالم اور یکجہتی کے نعرے درج تھے ۔ریلیز کے شرکاءکا کہنا تھا کہ وہ مقبوضہ کشمیر کی طلبہ برادری کے ساتھ شانہ بشانہ کھڑے ہیں۔بھارت نے مظالم کی نئی تاریخ رقم کی ہے۔کشمیریوں کی جدو جہد کے باعث آج دنیا کے سامنے بھارت کا مکروہ چہرہ بے نقاب ہو چکا ہے ۔آزاد کشمیر کے طلبہ مقبوضہ وادی کے طلبہ کی جدوجہد آزادی کی حمایت کرتے ہیں اور بھارت سے مطالبہ کرتے ہیں کشمیریوں کو ان کا بنیادی حق خود ارادیت دیا جائے ۔


آزاد کشمیر کے طلبہ نے پاکستانی اور کشمیری قیادت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ اسلام آباد اور مظفر آباد کے حکمران وزارتوں اور اقتدار کے مزے لے رہے جبکہ مقبوضہ وادی کے عوام پہ مظالم کے پہاڑ توڑے جا رہے ہیں ۔ پاکستان بین الاقوامی فورمز پر کشمیر کا مقدمہ پیش نہیں کرسکا۔ وزیر اعظم پاکستان سعودی عرب میں اسلامی ممالک کی سربراہ کانفرنس اور امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے سامنے بھارتی مظالم کے خلاف توانا آواز اٹھائیں ۔