ماں کی ڈانٹ سے دلبرداشتہ چھٹی کے طالب علم نے خودکشی کر لی

نارووال

نارووال (ویب ڈیسک) تھانہ رعیہ کے علاقہ موضع ارونگ آباد میں چھٹی کلاس کے طالب علم 12سالہ لڑکے نے ماں کی ڈانٹ ڈپٹ سے دلبرداشتہ ہوکر گلے میں پھنڈا ڈال کر خودکشی کر لی۔ لواحقین کا پولیس سے پوسٹ مارٹم نہ کروانے پر زبردست تکرار،گھر والوں نے میڈیا کو بھی کوریج سے روکنے کےلئے تلخ جملوں کا استعمال کیا۔

روزنامہ پاکستان کی خبریں ای میل آئی ڈی پر حاصل کرنے اور سبسکرپشن کیلئے یہاں کلک کریں۔
نوائے وقت کے مطابق لڑکے کے والد رمضان نے بتایا گذشتہ روز عثمان کی کھیلتے محلے کے بچوں سے لڑائی ہوئی اس کی والد ہ نے بچے کو ڈانٹا جس پر بچے نے دلبرداشتہ ہوکر گھر میں موجود لوہے کی چارپائی کھڑی کرکے اس کے پائے کے ساتھ رسی باندھ کر گلے میں ڈال کر لٹک گیا اور زندگی کی بازی ہار گیا۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائڈ موبائل ایپ ڈاو¿ن لوڈ کرنے کیلئے یہاں کلک کریں۔
تھانہ رعیہ نے نعش قبضہ میں لیکر پوسٹ مارٹم کےلئے ڈی ایچ کیو نارووال منتقل کر دی خبر سے علاقہ کی فضا سوگوار ہوگئی اور بچے کی والدہ پر غشی کے دورے جبکہ پولیس تھانہ رعیہ کے ایس ایچ او خالد وریا کا کہنا ہے کہ اس کا اپنے بڑے بھائی کے ساتھ جھگڑا ہوا جس پر عثمان نے غصے میں آکر خودکشی کی ہے۔ عثمان کے چھ بھائی اور ایک بہن ہے عثمان اپنے بہن بھائیوں میں4 نمبر پر تھا۔