نارووال میں پانچویں جماعت کی طالبہ اجتماعی زیادتی کے بعد دم توڑ گئی

نارووال

نارووال (ڈیلی پاکستان آن لائن ) وفاقی وزیر منصوبہ بندی احسن اقبال کے شہر نارووال میں 5درندہ صفت نوجوانوں نے لڑکی کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا جو تشویشناک حالت کے باعث ہسپتال جاتے دم توڑ گئی ۔

ابتک نیوز کے مطابق نارووال کے نواحی گاﺅں داور میں 5اوباش نوجوانوں نے 13سالہ لڑکی کو سکول سے گھر جاتے ہوئے اغواءکیا اور تین روز تک جنسی زیادتی کانشانہ بناتے رہے اور آج بے ہوشی کی حالت میں گھر کے باہر پھینک کر فرار ہو گئے ۔

شادی کے سیزن میں اس چیز سے بال دھونے سے ان میں ایسی چمک آئے گی کہ سب آپ کی تعریف کرنے پر مجبور ہوجائیں گے

ذرائع کا کہنا ہے کہ لڑکی کے والدین نے بچی کو تشویشاک حالت میں ہسپتال منتقل کرنے کی کوشش کی مگر وہ راستے میں ہی دم توڑ گئی ۔ متاثرہ والدین نے وزیراعلیٰ پنجاب سے ملزمان کو کڑی سزا دینے کی اپیل کی ہے۔ والدین کا کہنا ہے کہ بچی کو اغواءکے بعد3 دن تک اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا گیامگر پولیس نے تاحال مقدمہ درج نہیں کیا ہے۔