کلبھوشن یادیو کیس، عالمی عدالت انصاف میں ایڈہاک جج کی تعیناتی کیلئے 3 نام زیر غور

قومی

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) عالمی عدالت انصاف میں کلبھوشن یادیو کے معاملے پر ایڈہاک جج کی تعیناتی کیلئے تین نام زیر غور ہیں اور آئندہ ہفتے تک ان میں سے ایک نام فائنل کرکے عالمی عدالت انصاف کو بھجوادیا جائے گا۔
نجی ٹی وی ایکسپریس نیوز نے ذرائع کے حوالے سے دعویٰ کیا ہے کہ عالمی عدالت انصاف میں بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو کے مقدمے کی سماعت کے دوران بھارت کی جانب سے اپنا ایڈہاک جج تعینات کیا گیا تھا لیکن پاکستان کی جانب سے کوئی جج تعینات نہیں کیا گیا تھا۔ جج کی تعیناتی نہ ہونے پر حکومت پر اپوزیشن اور عوام کی جانب سے شدید تنقید کی گئی جس کے بعد حکومت نے عالمی عدالت انصاف میں ایڈہاک جج بھجوانے کا فیصلہ کیا تھا۔

کیا عمران خان نے بول ٹی وی جوائن کر لیا؟ اصل حقیقت سامنے آ گئی
حکومت کی جانب سے عالمی عدالت انصاف میں ایڈہاک جج کے طور پر تعیناتی کیلئے تین نام زیر غور ہیں جن میں 2 سابق چیف جسٹسز آف پاکستان تصدق حسین جیلانی اور ناصرالملک شامل ہیں جبکہ سابق اٹارنی جنرل مخدوم علی خان کے نام پر بھی غور کیا جا رہا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ایڈہاک جج کی تعیناتی کیلئے نام آئندہ ہفتے عالمی عدالت کو بھجوادیا جائے گا۔