فاروق ستار کی مجبوریوں اور پریشانیوں کو سمجھتا ہوں،پی ایس پی کے دروازے سب کیلئے کھلے ہیں،مصطفی کمال کی فاروق ستار کو مذاکرات کی دعوت

قومی

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن)پاک سرزمین پارٹی کے سربراہ مصطفی کمال نے ایم کیو ایم پاکستان کے رہنما فاروق ستار کو مذاکرات کی دعوت دیتے ہوئے کہا کہ پی ایس پی کے دروازے سب کیلئے کھلے ہیں،ساری چیزوں کے باوجود فاروق ستار کو مذاکرات کی دعوت دیتا ہوں،پریس کانفرنس کرتے ہوئے مصطفی کمال نے کہا کہ مہاجروں مایوس نہ ہونااب کوئی لڑائی نہیں ہوگی ،ہمارا درمیان کوئی ڈیڈلاک نہیں نہ ہی دشمنی ہے اورنہ ہی کوئی بات ختم ہوئی،میں ان کی مجبوریاں اور پریشانیاں سمجھتا ہوں میں فاروق ستار کے ساتھ ہر جگہ بیٹھ کر بات کرتے کو تیار ہوں۔

یہ بھی پڑھیں:۔بدھ کی پریس کانفرنس سے پہلے میٹنگ میں طے پایا کہ کیا بولنا ہے: مصطفیٰ کمال
پی ایس پی کے سربراہ نے کہا کہ تاثردیا جا رہا ہے کہ فاروق ستارکواغواکرکے پریس کانفرنس کرائی گئی اوریہ تاثرقائم کیاگیاکہ پی ایس پی والے اسٹیبلشمنٹ کے لوگ ہیں،مصطفی کمال کا کہناتھا کہ فاروق ستارسچ توبولتے نہیں،آدھاجھوٹ بولاہے،آج میں پورا سچ بتاو¿ں گا،اگرخبرلیک کروتوپوری خبرلیک کرو،انہوںنے کہا کہ پی ایس پی میری روزی روٹی نہیں،سربراہ ایم کیو ایم پاکستان کی خواہش پراسٹیبلشمنٹ نے ملاقات کرائی اور ان ملاقاتوں میں کامران ٹیسوری،عامرخان،فیصل سبزواری ،خواجہ اظہار،کنورنوید،خواجہ سہیل،وسیم اخترموجود ہوتے تھے جبکہ آخری ملاقات میں عامرخان نہیں تھے کیونکہ وہ بیرون ملک تھے، خواجہ اظہارکے ہاتھ کالکھا ہواپیپرموجود ہے کہ کیاکیا بولنا ہے،انہوں نے کہا کہ میں اسٹیبلشمنٹ کاایجنٹ نہیں ہوں،لیکن رابطے میں ضرورہوں،میں کارکنوں کی بازیابی کیلئے اسٹیبلشمنٹ سے بات نہیں کرونگاتوکس سے کرونگا۔

یہ بھی پڑھیں:۔فاروق ستارنے اسٹیبلشمنٹ سے کہہ کر ہمارے ساتھ ملاقات کی: مصطفیٰ کمال
مصطفی کمال نے کہا کہ عشرت العبادکوکہہ دیاتھاکہ ہم ایم کیوایم جوائن نہیں کریں گے،ہماراموقف ہے متحدہ بانی ایم کیوایم کی تھی ہے اوررہے گی،بانی ایم کیوایم را کےلئے کام کرتے ہیں،ادارے چاہتے ہیں کہ کراچی میں را کیلئے کام نہیں ہونا چاہئے ، لیکن فاروق ستارنے متحدہ بانی کیخلاف ایک لفظ نہیں بولا ،پی ایس پی ہماری ہے،آج یہ پاکستان کی برانڈ ہے لیکن ہم نے امن کی خاطرپارٹی ختم کرنے پراتفاق کیا۔ انہوںنے کہا کہ22 اگست 2016 کوبانی ایم کیوایم نے اپنے اوپرخودکش حملہ کردیا، بانی ایم کیوایم کی تقریرکے بعدمتحدہ اراکین اسمبلی اسی رات چھپ گئے تھے،فاروق ستارپربھی چھ ایف آئی آردرج تھیں،بانی متحدہ کی تقریرکے بعدفاروق ستارکوغداری کے مقدمے میں گرفتارکیاگیا،22 اگست کی پکڑدھکڑکے بعدعشرت العباد نے انیس قائم خانی کوفون کیاکہ وہ فاروق ستارکوچھڑوارہے ہیں،سابق گورنر سندھ نے کہاکہ کورکمانڈر،ڈی جی رینجرز،آرمی چیف،وزیراعظم،وزیرداخلہ سے بات ہوئی ہے،انیس قائم خانی نے عشرت العباد کو ساتھیوں سے مشورے کے بعدجواب دینے کاکہا،انہوں نے کہا کہ ساراماحول دیکھ کرایم کیوایم ارکان نے انیس قائم خانی سے رابطہ کیااور کہا کہ وہ صبح پی ایس پی میں شامل ہوناچاہتے ہیں،رات رینجرزکے پاس رہنے کے بعدفاروق ستارصبح پارٹی کے سربراہ بن گئے،مصطفی کمال نے کہا کہ فاروق ستارنے رینجرزکی حراست میں تمام باجیوں کا ایڈریس بتایا جنہوں نے توڑپھوڑکی،فاروق ستارکی دی گئی معلومات پرمہاجرخواتین کوگرفتارکیا گیا،بانی ایم کیوایم کی تقاریر پر مہاجرشرمندہ شرمندہ گھومتا تھا،ذراسی بات کرلیں توایم کیوایم ان سے شکایت کردیتی ہے،مصطفی کمال نے کہا کہ کیافاروق ستارکونہیں پتاکہ عمران فاروق کوکس نے قتل کرایا؟انہیں پتاہے کہ عمران فاروق کوبانی ایم کیوایم نے مروایا،پاک سرزمین پارٹی کے سربراہ نے کہا کہ ایم کیوایم میں لڑائی ہے کہ سب ایجنٹ بنناچاہتے ہیں،قتل کرنےوالے بھارتی سیٹ اپ کے لوگ گرفتارہیں،جب بانی متحدہ نے میڈیااداروں پرحملے کاکہاتوکیافاروق ستار،دیگرنے روکا؟،ایم کیوایم نے آج قبرستان کاتالاتڑوادیاہے،اب یہ لاشوں کی سیاست کرناچاہتے ہیں انہوں نے کہا کہ ایم کیوایم مہاجروں کے نام کی سیاست کررہی ہے،مہاجروں کاایم کیوایم سے بڑاکوئی دشمن نہیں،35 سال سے مہاجرنام پرسیاست کرلی،لوگوں کوکیاملا؟،انہوںنے کہا کہ ایم کیوایم کومانتاہی نہیں توالائنس کیسا؟ہمارے آنے کے بعدایم کیوایم کالاشوں کاکاروبارنہیں چل رہاتھا،کیا فاروق ستارہمیں بتائیں گے کہ مہاجروں کی فلاح کس میں ہے؟ہمیں کہاجاتاہے کہ ہم لانڈری ہیں،کیاآپ کواپنی قوم کوگندارکھنا ہے؟،انہوں نے کہا کہ میری ماں زندہ نہیں،اگروہ ہوتیں توان کوسیاست کیلئے استعمال نہیں کرتاجس طرح فاروق ستار نے اپنی والدہ کو سیاست کیلئے استعمال کیا۔
مصطفی کمال نے الزام عائدکرتے ہوئے کہا کہ جب رو¿ف صدیقی وزیرصنعت تھا وہ لندن پیسے بھجواتا رہا،عشرت العباد سرٹیفکیٹ بنوانے کے پچاس ہزارروپے لیتا تھا،میئر کراچی کے بیٹے نے 12 لاکھ پنشن دلوانے کیلئے 6 لاکھ روپے رشوت لی تھی،انہوں نے کہا کہ کیا میں مہاجرنہیں ہوں؟چارسال شہرکومیں نے بنایا،انہوں نے کہا کہ ہمیں کہا پشاور سے سیٹ لے کر دکھائیں ،اگر کراچی سے بھی سیٹ نہ ملی تو کیا اپنا نظریہ چھوڑ دوں؟۔

یہ بھی پڑھیں:۔متحدہ مجلس عمل کی بحالی، جماعت اسلامی اور جے یو آئی (ف)کے حکومت چھوڑنے کا امکان

مصطفی کمال نے لینڈ کروز کے سوال پر فاروق ستار کو پیش کش کرتے ہوئے کہا کہ فاروق ستارمیری3 کروڑ 50 لاکھ والی لینڈکروزر3 کروڑ 40 لاکھ میں لے لیں اورفاروق ستاراپنی16 لاکھ کی لینڈکروزرمجھے18 لاکھ میں دے دیں،انہوں نے کہا کہ پرویزمشرف بچارے ملک میں نہیں ان سے کوئی بات چیت نہیں،کیابانی ایم کیوایم سے دشمنی اوراتنا سب کچھ مشرف کوسربراہ بنانے کیلئے کررہے ہیں؟،انہوں نے کہا کہ اگرحماد صدیقی سے ملاقات ہوئی توضرور بتاؤں گا۔