پاناما فیصلے میں ہمیں انصاف نہیں ملا، ایساتاثرنہیں جاناچاہئے کہ سپریم کورٹ کیس میں مدعی بن گئی،انوشہ رحمان

قومی

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وقافی وزیر مملکت انفارمیشن ٹیکنالوجی انوشہ رحمان نے کہا ہے کہ جے آئی ٹی کی رپورٹ نامکمل ہے اور ایک نامکمل رپورٹ پر ریفرنس دائر کرنے کا حکم دیا گیا، امید ہے اعلیٰ عدلیہ قانون اور آئین کے تناظر میں کیس کا فیصلے کرے گی،سپریم کورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انوشہ رحمان نے کہا کہ سپریم کورٹ کے پاس نظر ثانی اپیل سننے کااختیارہے، ایسا محسوس ہوتا ہے کہ اس کیس میں ہمیں انصاف نہیں ملا، ایساتاثرنہیں جاناچاہئے کہ سپریم کورٹ کیس میں مدعی بن گئی، ایساتاثرجاناعدلیہ کےلئے اچھا نہیں ہوگا،وفاقی وزیر مملکت کا کہنا تھا کہ اگر چیئرمین نیب کام نہیں کررہا تو چیئرمین نیب کے خلاف کارروائی کریں، مانیٹرنگ جج نہ صرف فیصلے میں شامل تھے نظرثانی اپیل بھی سن رہے ہیں، سپریم کورٹ میں موجود جج پہلی بار مانیٹرنگ جج بنے ہیں ،انوشہ رحمان نے کہا کہ نظام انصاف میں جو چیزیں دیگر شہریوں کو میسر ہیں وہ نوازشریف ، اسحاق ڈار کو میسر نہیں۔