الیکشن کمیشن،عمران خان اور لیگی ارکان اسمبلی کیخلاف انتخابی ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزیوں کی سماعت4 دسمبرتک ملتوی

قومی

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)الیکشن کمیشن میں عمران خان اور ن لیگ کے ارکان اسمبلی کیخلاف انتخابی ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کی درخواستوں کی سماعت ہوئی،چیف الیکشن کمشنر سردار رضا حیات کی سربراہی میں 5 رکنی بنچ نے کی،چیئرمین تحریک انصاف پرجہلم اور ساہیوال میں ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزیوں کا الزام ہے، پی ٹی آئی کی جانب سے شاہد گوندل الیکشن کمیشن میں پیش ہوئے ،دوران سماعت شاہد گوندل نے موقف اختیار کیا کہ ضابطہ اخلاق اسلام آباد ہائی کورٹ میں زیر سماعت ہے ،اسلام آباد ہائی کورٹ نے 29 نومبر کی تاریخ مقرر کی ہے ، الیکشن کمیشن سے استدعا ہے کہ الیکشن کمیشن سماعت ملتوی کرے ۔
اس پر چیف الیکشن کمشنر نے کہا کہ اس طرح تو تاریخیں ہی پڑتی رہیں گی،انہوںنے استفسار کیا کہ اسلام آباد ہائیکورٹ نے اس پر حکم امتناعی تو جاری نہیں کیا ،اگر اسٹے آرڈر ہے تو اس کی کاپی فراہم کریں۔
شاہد گوندل نے جواب دیا کہ اسلام آباد ہائی کورٹ نے الیکشن کمیشن کو فائنل آرڈر سنانے سے روکاہوا ہے۔
چیف الیکشن کمشنر نے کہا کہ اسلام آباد ہائیکورٹ نے حکم امتناعی جاری نہیں کیا ،4 دسمبر کو فریقین کے وکلاءکے دلائل سنیں گے اور حکم نامہ جاری کریں گے،سردار رضا حیات نے این اے 120 میں انتخابی ضابطہ اخلاق کے تمام مقدمات کی سماعت بھی 4 دسمبر تک ملتوی کر دیئے ۔

مزید پڑھیں:۔الیکشن کمیشن،نوازشریف کوپارٹی صدارت سے روکنے سے متعلق درخواستوں کی سماعت30 نومبر تک ملتوی