درگاہ حضرت لعل شہباز قلندر میں شہید ہو نے والوں کی تعداد88 ہو گئی ، 343 زخمیوں میں سے 41 کی حالت تشویش ناک :ڈی جی ہیلتھ سندھ

قومی

حیدرآباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سیہون میں درگاہ حضرت لعل شہباز قلندر پر گذشتہ شام ہونے والے خود کش حملے میں شہید ہو نے والوں کی تعداد88 ہوگئی ہے جبکہ اس خوفناک حملے میں 343 افراد زخمی ہوئے جن میں سے 41 افراد کی حالت انتہائی تشویش ناک ہے ، شہید ہونے والے59 افراد کی میتیں ورثا کے حوالے ۔

مزید پڑھیں:Yayvo اور PSL اکٹھے ہو گئے، کرکٹ جنونیوں کا مزہ دوبالا ہو گیا

تفصیلات کے مطابق ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ سندھ  نے تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ سیہون شریف میں لعل شہباز قلندر کے مزار پر ہونے والے خود کش حملے میں اب تک 88 افراد جان کی بازی ہار چکے ہیں ،343 زخمیوں میں سے 41 افراد کی حالت انتہائی تشویش ناک ہے ،جس سے شہادتوں میں مزید اضافے کا خدشہ ہے ۔انہوں نے کہا کہ خود کش دھماکے کے 276  زخمی سندھ اور کراچی کے مختلف ہسپتالوں  میں زیر علاج ہیں ۔شہید ہونے والے 59 افراد کی میتیں ضروری کارروائی کے بعد ورثا کے حوالے کر دی گئی ہیں جبکہ , 15لاشوں کی شناخت نہیں ہو ئی ہے یہ لاشیں سیہون تعلقہ ہسپتال میں رکھی ہو ئی ہیں ـ ڈ ی جی ہیلتھ سندھ کا کہنا تھا کہ سیہون دھماکے کے 276 زخمی کراچی ، حیدرآباد ، جام شورو ، نوابشاہ ، سہیون اور لاڑکانہ کے مختلف ہسپتالوں میں زیر علاج ہیں جنہیں صحت کی بہترین طبی سہولتیں فراہم کی جا رہی ہیں ۔