ڈگڈگی بجانے والے ڈگڈگی بجاتے رہیں گے ہم اسی طرح ملک و قوم کی خدمت کرتے رہیں گے، نواز شریف

قومی

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیراعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ ڈگڈگی بجانے والے ڈگڈگی بجاتے رہیں گے ہم اسی طرح ملک و قوم کی خدمت کرتے رہیں گے ، مخالفین جتنی مرضی چاہیں الزام تراشی کر لیں لیکن انہیں عوام آئندہ بھی ووٹ نہیں دیں گے،ایوان صنعت و تجارت سیالکوٹ میں صنعتکاروں سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نواز شریف کا کہنا تھا2014 سے شروع ہونے والا کھیل آج بھی کسی نہ کسی شکل میں جاری ہے دھرنا ون اور ٹو کے بعد اب تیسرے دھرنے کی تیاری ہو رہی ہے ملک میں یہ جو مینا بازار لگا ہوا ہے یہ پاکستان کو کس طرف لےکر جائے گا، ہم نے 4 سال گزارے لیکن کرپشن کا ایک دھبہ نہیں لگا لیکن ہم سے اب 44 سال کا حساب مانگا جارہا ہے اور یہ کس چیز کا احتساب ہورہا ہے کچھ تو پتا چلے۔وزیراعظم کا کہنا تھا استعفیٰ وہ لوگ مانگ ہیں جو عوام کے ٹھکرائے ہوئے ہیں ،قوم کے سامنے پاناما کے معاملے پربھی سرخرو ہونگے ،مخالفین کی کارستانیوں کی وجہ سے کراچی اسٹاک ایکسچینج گراوٹ کا شکار ہے ایسی کارستانیاں کرنے والوں کا گریبان کون پکڑےگا۔ انہوں نے کہا 2013 میں اقتدار میں آئے تو حکومت کے پاس بجلی کے منصوبے لگانے کےلئے ایک پیسہ نہیں تھا اور قیاس آرائیاں کی جارہی تھیں کہ پاکستان دیوالیہ ہونے والا ہے ہر روز کرپشن کی داستانیں سامنے آرہی تھیں وہ حساب دیں جنہوں نے کرپشن کی ہم سے کیوں حساب مانگا جا رہا ہے ۔سمجھ نہیں آتی کرپشن کہاں ہوئی جس کا حساب ہو رہا ہے کسی خورد بردیا ہمارے ذاتی کا روبار کا احتساب ہورہا ہے ۔وزیراعظم کا کہنا تھاچار سال میں ہمیں کام نہیں کرنے دیا گیا اگر یہ تماشا نہ لگایا جاتا تو ملک آج ترقیوں کی بلندیوں پر ہوتادھرنوں کی وجہ سے چینی صدر 6 ماہ تاخیر سے پاکستان آئے، اگر یہ 6 ماہ ضائع نہ ہوتے تو سی پیک کا کام کافی حد تک مکمل کر لیا جاتا ۔وزیراعظم نے صنعتکاروں کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ 2017 کا پاکستان 2013 سے بہتر ہے یا نہیں اور کیا اس پر ہمیں شاباش ملنی چاہئے، پچھلی حکومت میں ملک اندھیروں میں ڈوب گیا تھا اور اب عنقریب لوڈشیڈنگ سے نجات مل جائے گی ۔وزیراعظم نواز شریف نے کہا ملک بھر میں موٹرویز کا کام شروع ہوچکا ہے بلوچستان میں بے پناہ ترقی ہوئی ہے ،آئے دن بجلی کے نئے کار خانوں کا افتتاح ہو رہا ہے اور کچھ کارخانوں نے پیداوار دینا بھی شروع کردی اور انشاءاللہ 2018 میں ملک سے بجلی کی لوڈشیڈنگ کا خاتمہ کردیا جائے گا۔ وزیراعظم نے کہا حکومت کل 1970 سے شروع ہونے والے پراجیکٹ لواری ٹنل کا کل افتتاح کروں گا۔