پاکستانی باہمت خاتون جو رکشہ چلا کر اپنی گزر بسر کررہی تھی ، اب وہ کس حال میں ہے اور روزنامہ پاکستان کو انٹرویو کا کیا اثرہوا؟ جان کرآپ کو بھی پاکستانیوں پر فخر ہوگا

قومی

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان کی وہ باہمت خاتون جو رکشہ چلا کر اپنی زندگی گزار رہی تھی ،ڈیلی پاکستان کو انٹرویو دینے کے بعد اب وہ خاتون پہلے کی نسبت بہت خوشحال زندگی بسر کر رہی ہے۔کچھ روز قبل ڈیلی پاکستان نے اس  خاتون کا انٹرویو کیا تھا جس کے بعد پورے پاکستان سے لوگوں نے اس سے ہمدردی جتائی اور مالی امداد بھی شروع کردی ۔

ایک ’برگر لڑکی‘ کیلئے اکیلے سفر کرنا کتنا مشکل ہے اور گھر سے نکلتے ہوئے اس کی والدہ نے اسے کونسی تین نصیحتیں کیں؟ اس لڑکی نے سب کچھ بتا دیا، واضح پیغام بھی دیدیا 

تفصیلات کے مطابق ڈیلی پاکستان کو دوسری بار انٹرویو دیتے ہوئے رکشہ چلانے والی خاتون کا کہنا تھا کہ انٹرویو کے بعد اللہ نے میری پکارسن لی اورپاکستانی قوم نے میری بھرپور انداز میں مدد کی۔پاکستان کے علاوہ جرمنی ،فرانس، ناروے ، سعودی عرب اور بیشتر ممالک سے بھی لوگوں نے میری مالی اور اخلاقی مددکی۔میں اپنی چار بیٹیوں اور تین نواسیوں کی پرورش کرتی ہوں، ہمارے گھر میں کئی روزتک کھانا نہیں بنتا تھا ،میرے پاس اپنی بچیوں کو اچھا کھانا کھلانے کے پیسے تک نہیں ہوتے تھے لیکن  ڈیلی پاکستان کو انٹرویو دینے کے بعد لوگوں نے میری  مالی مدد  شروع کی جس کے بعد میں اب اپنی بچیوں کی ضروریات کو پورا کرسکتی ہوں۔اللہ کے فضل سے میرے پاس اس وقت 10لاکھ روپے اکٹھا ہو گئے ہیں جس کے زیعے میں بچیوں کی شادیاں بھی کر سکتی ہوں۔مزید کیا کچھ کہا؟ آپ بھی سنئے