جے آئی ٹی کو مسترد کرنا توہین عدالت ہے،مخالفین پاکستان کو اندھیروں میں دھکیلنا چاہتے ہیں:مریم اورنگزیب

قومی

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیرمملکت برائے اطلاعات و نشریات مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ جے آئی ٹی کو مسترد کرنا توہین عدالت ہے،جو لو گ جے آئی ٹی کو مسترد کررہے ہیں اس کے پیچھے ایک سوچ ہے،مخالفین پاکستان کو اندھیروں میں دھکیلنا چاہتے ہیں،پورے بنچ نے حکمنامے پر دستخط کرکے جے آئی ٹی بنانے کا حکم دیا،مخالفین کو انتخابی اصلاحات سے کوئی سروکار نہیں،دھرنے دینے والوں نے ایک بار پھر وزیراعظم سے استعفے کا مطالبہ کردیا،اداروں کی تضحیک کرنے والوں کو کل جواب مل گیا،عمران خان جھوٹے الزامات لیکر سپریم کورٹ گئے اور کل عدلیہ کا فیصلہ وزیراعظم کے خط کی تائید ہے۔

”آپ کہتے ہیں تو ہم ایان علی کو۔۔۔“ ن لیگ نے پیپلز پارٹی کو ایسی پیشکش کردی کہ پاکستانی دنگ رہ جائیں گے

تفصیلات کے مطابق مریم اورنگزیب نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ راہدادری منصوبہ وزیراعظم کا عوام کیلئے تحفہ ہے،سی پیک ایک روٹ کی بات نہیں 65 ممالک کو ملانے کی بات ہے،پاکستان میں صنعتوں کی ترقی وزیراعظم نواز شریف کی ترجیح ہے،پاکستان کے کچھ عناصر دشمنوں کے ساتھ مل جاتے ہیں اور وزیراعظم نے احتساب کا عمل عوام کیلئے مکمل کیا۔

پاناما کا فیصلہ سننے کے بعد نوازشریف نے شکرانے کے نوافل اداکئے

وزیرمملکت نے مزید کہا کہ وزیراعظم کو عوام نے مینڈیٹ دیا،مخالفین کا رویہ ملکی استحکام کے خلاف ہے،پاکستان نواز شریف کی قیادت میں ترقی کرے گا،نواز شریف ملک کے سب سے مقبول لیڈر اور شخصیت ہیں۔مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ وزیراعظم نے اپنی تین نسلوں کا حساب دیا اور تاریخ میں ایسا کبھی بھی نہیں ہوا،جے آئی ٹی میں جواب دیا جائے گا اور ایک تاریخ رقم ہوگی،سیاسی کھیل کے کھلونے تلاش کرنے والوں کو کچھ نہیں ملے گا،وفاقی حکومت نے جو وعدے کئے وہ سب پورے کئے اب عوام فیصلہ کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ جشن وزیراعظم کے سرخرو ہونے کا ہے،عدالت نے وزیراعظم پر لگائے گئے 7 الزامات کومسترد کردیا،عمران خان افراتفری پھیلانا چاہتے ہیں،مسلم لیگ ن نے پاکستانی تاریخ میں وہ کا م کیاجو کسی اور نہ نہیں کیا اور کوئی بھی ٹولہ یا شخص وزیراعظم سے استعفیٰ نہیں مانگ سکتا۔