”میں اسی دن ن لیگ چھوڑ دوں گا جب۔۔۔“چوہدری نثار نے بڑا اعلان کردیا

قومی

ٹیکسلا(ڈیلی پاکستان آن لائن)وفاقی وزیرداخلہ چوہدری نثار علی خان نے پانامہ فیصلہ آنے کے بعد پہلا تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ اگر میں کسی ایک گروہ میں بیٹھاہوں جہاں کرپشن ہورہی ہو تو ذمہ داری مجھ پر بھی آتی ہے ، میرے سامنے ایسی کوئی غلط بات نہیں ہوئی ، اگر جس دن ایسی کوئی چیز دیکھ لی تو اسی وقت پارٹی چھوڑ دوں گا۔
پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے چوہدری نثار علی خان نے کہاکہ وزیراعظم سے بھی بات ہوئی ہے، دویا تین ججوں کی بات نہ کی جائے ، فیصلہ مشترکہ بینچ کا ہوتاہے ، اگر کسی کو اختلاف ہوتاہے تو بعض اوقات وہ دستخط ہی نہیں کرتے، اس فیصلے پر پانچوں جج صاحبان نے دستخط کیے ہیں۔ اُن کاکہناتھاکہ ہمارے ہاں اچھے سے زیادہ برے کام کی تشہیر ہوتی ہے، معاملہ اب بھی عدالت میں ہے اور اسے عدالت پر ہی چھوڑ دینا چاہیے،الزام لگانے والوں کے پاس شواہد موجود نہیں ہیں۔

پہلے ہی کہاتھا کہ تحقیقات کی ضرورت ہے:سابق چیف جسٹس انور ظہیر جمالی کا پانامہ فیصلے پر تبصرہ

چوہدری نثار کاکہناتھاکہ نواز شریف کے خلاف الٹی گنگا بہائی جارہی ہے اور کہا جارہا ہے کہ ثبوت بھی خود دیں، مخالفین پھڈا بازی چاہتے ہیں۔چوہدری نثار نے بتایاکہ ڈان لیکس کی رپورٹ پانا ما فیصلے کی وجہ سے کچھ دنوں کیلئے موخر ہوگئی ہے، آئندہ پیر تک رپورٹ آجائے گی۔