”مک گیا تیرا شو، گو نواز گو“ میاں صاحب پاناما کیس سے مکمل طور پر بری نہیں ہوئے، فیصلے سے دہرا قانون ثابت ہوگیا, وزیر اعظم استعفیٰ دیں: بلاول بھٹو زرداری

قومی

جھنگ (ڈیلی پاکستان آن لائن) چیئرمین پاکستان پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے وزیر اعظم نواز شریف سے استعفیٰ کا مطالبہ کرتے ہوئے  کہا ہے کہ پاناما کیس کے فیصلے سے ثابت ہوگیا کہ ایک فیصلہ شریفوں کیلئے ہے اور دوسرا ملک کے عوام کیلئے ہے، میاں صاحب پاناما کیس سے مکمل طور پر بری نہیں ہوئے بلکہ ان کے خلاف عوامی عدالت نے فیصلہ دے دیا ہے۔ بلاول بھٹو نے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے ” گو نواز گو“ کے نعرے بھی لگائے۔
شاہ جیونہ جھنگ میں مخدوم فیصل صالح حیات کی جانب سے پیپلز پارٹی میں واپسی کے بعد پہلا عوامی جلسہ منعقد کیا گیا ۔ اس جلسے سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے پاناما کیس کے فیصلے پر کڑی تنقید کی اور کہا پاناما کیس کے فیصلے سے ثابت ہوگیا کہ ایک فیصلہ شریفوں کیلئے ہے اور دوسرا ملک کے عوام کیلئے ہے، ایک قانون شریفوں کیلئے ہے اور دوسرا قانون غریب عوام کیلئے ہے۔ یہ لوگ ماڈل ٹاو¿ن میں لوگوں کوگولیاں مارکرقتل کردیں کوئی مجرم نہیں ٹھہراتا لیکن شہید بی بی کی حکومت کو آئین کے ایک ہی آرٹیکل کے تحت ختم کردیا جاتاہے، کب تک ملک میں یہ دو قانون چلیں گے؟ ۔

میاں صاحب آپ گھر نہیں کسی اور گھر جائیں گے،آپ کو لانڈھی جیل میں کھانا بھیجنے کیلئے تیار ہوں :آصف علی زرداری
انہوں نے کہا کہ ایک خط نہ لکھنے پر گیلانی کو گھر بھیج دیا جاتاہے عوام اور نوجوانوں سے پوچھتا ہوں کیا آپ ان دو قانونوں کو مانتے ہو؟ نہ ہی ہمیں دو پاکستان چاہئیں اور نہ ہی دو قانون، ہمیں ایک پاکستان اور ایک قانون چاہیے۔ ہم ایسے پاکستان کی جدوجہدکر رہے ہیں جس میں امیر ، غریب ، طاقتوراورکمزورکیلئے ایک ہی قانون ہو۔
بلاول بھٹو زرداری نے وزیر اعظم کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ میاں صاحب آپ مکمل طور پر بری نہیں ہوئے، آپ کیخلاف عوام کی عدالت نے بھی پاناما اور لوڈشیڈنگ پر فیصلہ دے دیا ہے۔ بلاول بھٹو نے اپنے خطاب کے اختتام پر گو نواز گو کے نعرے لگوائے اور کہا ” مک گیا تیرا شو ، گو نواز گو نواز“۔
واضح رہے کہ کچھ روز پہلے نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے سابق صدر آصف علی زرداری نے کہا تھا کہ میاں نواز شریف سے اب کبھی بھی ملاقات نہیں کروں گا اور آئندہ ہمارے تمام جلسوں میں ” گو نواز گو“ ہوگا۔ بلاول کی جانب سے گو نواز گو کے نعرے اس چیز کی عکاسی کرتے ہیں کہ پیپلز پارٹی نے باقاعدہ انتخابی مہم چلانے اور حکومت کو واقعی ٹف ٹائم دینے کا فیصلہ کرلیا ہے۔ علاوہ ازیں شاہ جیونہ میں ہونے والے جلسے میں اختتامی تقریر سابق صدر آصف علی زرداری نے کی جس میں انہوں نے بھی ” گو نواز گو“ کے نعرے لگائے۔