پاناما فیصلے کے بعد وزیر اعظم کی زیر صدارت پہلا مشاورتی اجلاس،نوا ز شریف کو قانونی ماہرین نے فیصلے کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دی

قومی

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن ) پاناما لیکس کے فیصلے کے بعد وزیراعظم کی زیر صدارت پہلا مشاورتی اجلاس طلب کیا گیا جس میں قانونی ماہرین نے نواز شریف کو فیصلے سے متعلق تفصیلی بریفنگ دی۔

مسلم لیگ اور نواز شریف کوخیبر پختونخوا آنے سے کوئی نہیں روک سکتا،عدالتی فیصلے کے بعد عوام کا جوش دیدنی :امیر مقام

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم نواز شریف کی زیر صدارت پاناما لیکس کا فیصلہ آنے کے بعد پہلامشاورتی اجلاس طلب کیا گیاجس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہم نے پہلے بھی کہا تھا فیصلہ جو بھی ہو مانیں گے اور عدالتوں کے فیصلوں کا احترام کرتے ہیں۔ اجلاس میں سپریم کورٹ کے فیصلے کو قبول کرنے پراتفاق اوروفاقی وزرانے وزیر اعظم پر مکمل اعتماد اور یکجہتی کا اظہار کیا ۔وزیراعظم ذرائع کے مطابق فیصلے کے قانونی اور سیاسی پہلووں پر تفصیلی مشاورت اورجے آئی ٹی کے حوالے سے آیندہ کی حکمت عملی بھی طے کی گئی او روزیراعظم کی زیرصدارت اجلاس میں مشاورتی عمل جاری رکھنے کافیصلہ کیا گیا۔
نواز شریف کی زیر صدارت اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ سپریم کورٹ کے13 سوالات کا جواب ،جے آ ئی ٹی سے بھرپور تعاون ، سپریم کورٹ کے فیصلے پرمن و عن عمل ، کچھ تحفظات ہونے کے باوجود بہانہ نہیں بنایاجائےگا اور حکومت آئین اور قانون کی پاسداری کرے گی جبکہ اجلاس میں اتفاق کیا گیا کہ اپوزیشن صرف انتشار چاہتی ہے جس میں کبھی کامیاب نہیں ہوگی ۔