برطانیہ کیساتھ 2معاہدوں پر دستخط ہوئے :چودھری نثار،الطاف حسین پر کیسز میں قانونی تقاضے پورے کیے جائیں گے : برطانوی سیکرٹری داخلہ

قومی

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )وفاقی وزیر داخلہ چودھری نثار علی خان نے کہا ہے کہ برطانیہ کے ساتھ 2معاہدوں پر دستخط ہوئے ہیں جن میں ایک امیگریشن کا اور دوسرا مفاہمت کی یادداشت کا معاہدہ شامل ہے ۔” الطاف حسین کا معاملہ برطانیہ کے ساتھ مسلسل اٹھا رہے ہیں “۔

اسلام آباد میں برطانوی سیکرٹری داخلہ امبررڈ کیساتھ ملاقات کے بعد مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے انکا کہنا تھا کہ برطانیہ سے پاکستان کے مستحکم تعلقات ہیں اوردونوں ممالک میں کوئی ایسے مسائل نہیں جو تعلقات میں رکاوٹ ہوں ۔الطاف حسین کا معاملہ برطانیہ کے ساتھ مسلسل اٹھا رہے ہیں ۔افغان مصالحتی عمل میں سہولت فراہم کرنے کیلیے تیارہیں۔یورپی یونین سے علیحدگی کے بعد پاکستان سے تجارتی تعلقات بڑھاناچاہتےہیں۔

پنجاب یونیورسٹی میدان جنگ بن گئی کیونکہ۔۔۔

انہوں نے کہا کہ برطانوی ہم منصب سے کئی معاملات پر بات ہوئی اوربرطانیہ اور پاکستان کی وزارت داخلہ میں باہمی بات چیت پر اتفاق کیا گیا ہے جبکہ بغیر دستاویز برطانیہ میں مقیم پاکستانیو ں کے بارے میں بھی بات ہوئی ۔ایجنڈے میں دہشتگردی اور معلومات کا تبادلہ بھی شامل ہے ۔برطانوی سیکرٹری داخلہ سے سیکیورٹی ، انسداد دہشتگردی اور منشیات کی روک تھام پر بات ہوئی۔

امریکا نے 12 ممالک کے مسافروں پردوران پرواز اپنے ساتھ الیکٹرانک اشیاء لیجانے پر پابندی لگانے کا فیصلہ کر لیا 

برطانوی سیکرٹری داخلہ نے کہا کہ متحدہ بانی کے بارے میں پاکستانی حکومت کی تشویش سمجھتی ہوں اورچودھری نثار سے الطاف حسین کی غیر قانونی سرگرمیوں پر بات ہوئی ہے ۔بانی ایم کیو ایم پر کیسز میں قانون کے تقاضے پورے کیے جائیں گے ۔انگلینڈ میں غیر قانونی سرگرمیوں کی بلکل اجاز ت نہیں ۔
انہوں نے مزید کہا کہ الطاف حسین کے معاملے پر پاکستان کے تحفظات دیکھ رہے ہیں ۔ ”پاکستان کی معیشت میں بتدریج بہتری آرہی ہے“۔ دو سال میں پاکستان کی سیکیورٹی میں بہت بہتری آئی ہے ۔ پاکستان جس طرح دہشتگردی کا مقابلہ کر رہی ہے اس سے بہت متاثر ہوں۔

بھارتی ماڈل نے پنکھے سے لٹک کر خودکشی کر لی کیونکہ۔۔۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستانی سیکیورٹی اداروں کی کارکردگی قابل تعریف ہے ۔پاکستان سے شراکت داری جاری رکھنا چاہتے ہیں اورعالمی چیلنجز کا مل کر مقابلہ کریں گے ۔دہشتگردی سے پاکستان کو بہت زیادہنقصان ہوا ۔دونوں ملکوں کیلئے خوشخالی کے یکساں مواقع موجود ہیں ۔برطانوی ہوم سیکرٹری کا کہنا تھا کہ پاکستان کیساتھ نیشنل ایکشن پلان میں تعاون کے خواہاں ہیں ۔