ہم تحفظ ناموس رسالتؐ نہ کرسکے تو جینے کا کوئی حق نہیں:فضل الرحمن

علاقائی


فیصل آباد (صباح نیوز)جمعیت علما اسلام (ف)کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ اسلام کے نام پر بننے والے پاکستان میں ناموس رسالتؐ کاتحفظ نہ کرسکیں تو ہمیں جینے کا کوئی حق نہیں۔تحفظ ختم نبوت ورسالتؐ ہر مسلمان کا عقیدہ ہے انکا تحفظ ریاست کی آئینی ذمہ داری ہے۔ مسلمان اپنی صفوں میں اتحاد پیدا کریں، ہم نے پوری قوم اور امت کی آواز بننا ہے، جمہوری اورپارلیمانی سیاست سے اسلامی نظام کیلئے کوششیں کررہے ہیں، پارلیمانی نظام میں فیصلہ عوام نے کرنا ہوتا ہے ان کا اعتماد حاصل کریں ، پارلیمنٹ کی سیاست کریں گے تولوگ اپنی ضرورتوں کیلئے آپ کے پاس آئیں گے، اپنے تحفظ کیلئے علماکرام کو سیاسی طور پر منظم ہونا ضروری ہے،طاقتور بنیں گے تو مدارس کے چھاپوں سے جان چھوٹے گی ۔فیصل آباد میں علما کنونشن سے خطاب میں مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ جن لوگوں کو پارلیمانی جدوجہد پر یقین نہیں وہ ضمانت دیں کہ بندوق سے اسلامی نظام نافذ ہوجائے گا ۔جے یو آئی سربراہ کا کہناتھاکہ علماء کو پارلیمانی نظام کو اپنانا ہوگا،ایسا ہوگا تو وہ لوگوں کے مسائل حل کرسکیں گے ورنہ لوگ صرف دم درود کروانے ہی علما کے پاس آئیں گے ۔انہوں نے علما کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ پارلیمانی نظام میں فیصلہ عوام نے کرنا ہوتا ہے ان کا اعتماد حاصل کریں ، پارلیمنٹ کی سیاست کریں گے تولوگ اپنی ضرورتوں کیلئے آپ کے پاس آئیں گے ۔مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ اپنے تحفظ کیلئے علماکرام کو سیاسی طور پر منظم ہونا ضروری ہے،طاقتور بنیں گے تو مدارس کے چھاپوں سے جان چھوٹے گی۔