ضلع کچہری خزانہ برانچ میں اشٹام پیپرز کی مصنوعی قلت پیدا کردی گئی

علاقائی


لاہور(اپنے نمائندے سے )ضلع کچہری لاہور خزانہ برانچ میں اشٹام پیپرز کی مصنوعی قلت پیدا کردی گئی ،عملہ خزانہ برانچ نے 20،50اور 100والے اشٹام پیپر کو کئی گنا زائد قیمت وصول کرکے بلیک میں فروخت کرنا شروع کر دیا ،سائلین مہنگے داموں اشٹام پیپرز خریدنے پر مجبور،ڈومیسائل ،بیان حلفی سرکاری و پرائیویٹ امور کیلئے استعمال ہونیوالے اشٹام پیپرز کی قلت کے باعث لوگ پریشانی اور خواری کا شکار ہوکر رہ گئے ۔ معلوم ہوا ہے کہ بورڈ آف ریونیو کے زیر انتظام ضلع کچہری لاہور میں واقع خزانہ برانچ عملہ نے اشٹام پیپر ز کی مصنوعی قلت پیدا کرکے اپنا کاروبار کھول لیا ہے جبکہ اشٹام پیپرز کے حصول کیلئے آنیوالے سائلین سے اشٹام پیپرز کی ترسیل نہ ہونے کا بہانہ بنایا جا رہا ہے تاہم وہی اشٹام پیپرز کئی گنا زائد قیمت پر وہی عملہ فوری مہیا کر دیتا ہے ،ضلع کچہری آئے ہوئے شاہد محمود ،ارسلان علی ،عدنان محمود ،قاسم ثاقب، محمد حفیظ اور دیگر نے کہا ہے ہمیں عدالتی امور ،ڈومیسائل ،بیان حلفی و دیگر سرکاری اور پرائیویٹ امور کیلئے اشٹام پیپرز ضرورت ہیں لیکن خزانہ برانچ عملہ کا کہنا ہے ابھی اشٹام پیپرز نہیں مل سکتے چند دن بعد رابطہ کریں لیکن برانچ کے باہرموجود ٹاؤٹ نے وہی اشٹام پیپرز کئی گنا زائد قیمت وصول کرکے ہمیں دیا ہے ،متعلقہ حکام اس کا نوٹس ہی نہیں لے رہے ۔ 50روپے والے اشٹام پیپرز کی کاپی 7ہزار، 20روپے والے اشٹام پیپرز کی کاپی 4ہزاراور 100والے اشٹام پیپرز کی کاپی 10ہزار کی بجائے 12ہزار میں فروخت کی جارہی ہے ۔ اشٹام پیپرز کی مصنوعی قلت پیدا کرکے عوام کی جیبوں پر ڈاکہ ڈالا جا رہاہے ، سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو فوری نوٹس لیں اور مصنوعی قلت پیدا کرنے میں ملوث اہلکاروں کیخلاف قانونی کارروائی عمل میں لائیں ۔دوسری طرف ٹریژی آفیسر کا اپنے موقف میں کہنا ہے کہ اشٹام پیپرز کی فراہمی ایک یا دو دن میں شروع کر دی جائے گی ،مصنوعی قلت کی باتوں میں کوئی صداقت نہیں ۔
اشٹام پیپر