مصالحتی مراکز میں دو روز میں 3فیملی کیسوں کو نمٹا دیاگیا

علاقائی

لاہور(نامہ نگار) مصالحتی مرکز میں دو روز میں 3فیملی کیسوں میں مصالحت کرانے کے بعد نمٹا دیاگیا، تینوں مقدمات کو ڈگری کے لئے متعلقہ فیملی عدالتوں کو بھیج دیا گیا ہے جبکہ مصالحتی مرکز میں فیصلے جلد ہونے پر اب سائلین میں بھی خوشی کی لہر دوڑ گئی ہے۔ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج عابد حسین قریشی کی نگرانی میں کام کرنے والے مصالحتی مرکز ون اور ٹو نے 2روز میں فیملی کے 3 کیسوں کو فریقین کی رضا مندی سے نمٹا یا ہے ، مصالحتی مرکز کے جج عمران نذیر نے بچے کے خرچے کے دعوے کو والدین کی رضا مندی سے طے کراتے ہوئے بچے کا خرچ 5ہزار روپے ماہانہ مقرر کردیاہے،بچے کے خرچے کا یہ دعویٰ کافی عرصے سے عدالت میں چل رہا تھا ،فریقین خرچے کے معاملے میں عدالتوں کے کافی عرصے سے چکر لگا رہے تھے ،فیملی سول جج نے یہ دیکھتے ہوئے کہ کیس میں مصالحت ہوسکتی ہے اس کو مصالحتی مرکز میں بھجوا یا تھا،جہاں پر دو روز میں باپ عبداللہ کو 5ہزارروپے خرچ دینے پر امادہ کرلیاگیا، اسی طرح مصالحتی عدالت نے دو روز میں 3کیسوں کو نمٹا دیا گیاہے ۔