آٹھ شادیاں رچانے والی دوشیزہ کا گردہ فروش گروہ سے تعلق ہونے کا انکشاف

سرگودھا

سرگودھا (آئی این پی)صرف چار ماہ میں  آٹھ شادیاں رچا کر لوگوں کو دونوں ہاتھوں سے لوٹنے والی چالباز دوشیزہ ثناءبی بی کے متعلق ابتدائی پولیس تفتیش کے بعد انکشاف ہواہے کہ ثناءبی بی کے خاندان کا تعلق انسانی اعضاء , گردوں کی فروخت سے دنیابھر میں شہرت پانیوالے علاقہ کوٹ مومن سے ہے جہاں غربت کے ہاتھوں تنگ آکر کئی افراد اپنے گردے فروخت کرنے پر مجبورہیں۔

کرائے کے مکان میں رہنے والے میاں بیوی کو ایک دن کمرے کی چھت سے عجیب سی روشنی آتی نظر آئی، قریب جاکر دیکھا تو پیروں تلے زمین نکل گئی کیونکہ۔۔۔ اگر آپ بھی کرائے پر رہتے ہیں تو یہ خبر ضرور پڑھ لیں

ثناءبی بی کے متعلق پولیس نے بتایا کہ اس کے والدین کا تعلق مسلم شیخ خاندان سے ہے۔چند سال قبل اس کے والد عمر حیات وفات پاگیا جس کی وفات کے بعد غربت سے تنگ آکر اس کی والدہ شمیم بی بی نے ربنواز نامی شخص کے ساتھ مل کر اپنی بیٹی ثناء، اس کی چھوٹی بہن اور بھائی سمیت گردے فروخت کرنے کیلئے وفاقی دارالحکومت اسلام آباد اور راولپنڈی چلے گئے جہاں حکومت کی طرف سے اس مکروہ دھندہ کیخلاف کارروائی کے خوف سے ان لوگوں نے غربت کے ہاتھوں مجبور ہو کر عصمت فروشی اور شادی کا جھانسہ دے کر لوگوں کو لوٹنے کا منصوبہ بنایا اور سرگودھا آکر اس دھندہ میں دیگر خواتین اور مرد حضرات کو شامل کرکے چھ ماہ کے دوران کئی افراد کو لوٹا۔ اس دوران اس گینگ نے ثناءکی یکے بعد دیگرے آٹھ مختلف افراد سے شادیاں رچائیں اور ان افراد سے لاکھوں کی نقدی ، طلائی زیورات اور دیگر قیمتی سامان لوٹ لیا۔