سپاٹ فکسنگ میں ملوث کھلاڑی قوم کے مجرم ہیں ان پر تاحیات پابندی لگانی چاہئے : شاہد آفریدی

کھیل

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان شاہد آفریدی نے کہا کہ سپاٹ فکسنگ بہت بڑا جرم ہے اس کے سدباب کے لئے مجرم کھلاڑیوں پر تاحیات پابندی لگائی جائے۔سلمان بٹ 20کروڑ عوام کے کپتان تھے انہوں نے کروڑوں پاکستانیوں کے ساتھ غداری کی ہے۔ چھوٹے چورڈاکو توپکڑ ےجاتے ہیں لیکن جوسسٹم چلارہے ہیں ان پرہاتھ نہیں ڈالاجاتا۔

مسلمانوں کے خلاف متعصبانہ رویہ بند نہ ہوا تو بھارت کے لئے کشمیرپر قبضہ برقرار رکھنا ناممکن ہوگا :فاروق عبد اللہ
جیو نیوز کے پروگرام آج شاہ زیب خانزادہ سے گفتگو کرتے ہوئے شاہد آفریدی نے کہا کہ اسپاٹ فکسنگ پر 5سال کی سزا کافی نہیں۔ اگر ایک مثال بنادی جاتی تو کوئی کھلاڑی یہ حرکت نہ کرتا۔ کھلاڑیوں سے غلطی ہوئی ہے کہ انھوں نے رابطوں کانہیں بتایا۔ان لڑکوں کی وجہ سے ہم پر ایسے نظر رکھی جاتی جیسے ہم سب قصور وار ہیں۔ 2010کے بعدکرکٹ ٹیم کی جو حالت کردی گئی تھی سوچا بھی نہیں جاسکتا۔سپاٹ فکسنگ کرنے والے لڑکوں کی وجہ سے ہمارے اوپر کرفیو لگادیا گیا تھا اور ہماری ہر ایک حرکت نوٹ کی جاتی تھی، ہم نے وہ وقت بہت ہی مشکل گزارا ہے۔

بھارتی خاتون کو نوکری کا جھانسا دے کر انسانی سمگلروں نے جنسی غلام بنا دیا

کرکٹ کمرشل ہونے کی وجہ حلال طریقے سے کروڑوں کمائے جا سکتے ہیں ۔ تعلیم یافتہ اور ناخواندہ دونوں قسم کے کھلاڑی سپاٹ فکسنگ میں ملوث پائے گئے تھے۔ سپاٹ فکسنگ سے پڑھائی کا تعلق نہیں گھر کی تعلیم سب سے اہم ہوتی ہے والدین اپنے بچوں کی تربیت کا درست طریقہ اختیا رکریں ۔