این اے 122ریلوے کالونی کے مکین گندگی کے باعثءپھیلتی بیماریوں سے پریشان

این اے 122ریلوے کالونی کے مکین گندگی کے باعثءپھیلتی بیماریوں سے پریشان
این اے 122ریلوے کالونی کے مکین گندگی کے باعثءپھیلتی بیماریوں سے پریشان

  

لاہور (ملک خیام رفیق / الیکشن سیل) حلقہ این اے 122 ریلوے کالونی کے رہائشی پینے کے گندے پانی، گندگی، خراب سیوریج، مکھی مچھروں کی افزائش سے پھیلتی بیماریوں سے پریشان اپنے حلقہ کے سابقہ عوامی نمائندوں کو کوستے رہے۔ رہائشی انور علی نے روزنامہ ”پاکستان“ سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے علاقہ میں پینے کا پانی بدبودار ہے جس کی وجہ سے علاقہ کی عوام معدے اور دیگر بیماریوں میں مبتلا ہو رہی ہے۔ انور علی گل نے بتایا کہ ہم نے کئی دفعہ اپنے سابقہ نمائندوں کی توجہ اس اہم مسئلہ کی طرف دلائی لیکن انہوں نے نوٹس نہیں لیا، اب ہم اس کو ووٹ دیں گے جو ہمارے مسائل حل کرے گا۔ جاوید نے کہا کہ علاقہ میں گیس کی لوڈ شیڈنگ کی وجہ سے ہم بہت پریشان ہیں اور اکثر کھانا پکانے کے وقت کہیں غائب ہوتی ہے جس کی وجہ سے ہمیں بھوکا رہنا پڑتا ہے اور بچے بھوکے سکول جاتے ہیں۔ رہائشی شان نے بتایا کہ علاقہ میں بہت زیادہ گندگی ہے اور صفائی کا انتظام نہیں جس کی وجہ سے ہر طرف گندگی کے ڈھیر نظر آتے ہیں اور جراثیم ،بیماریاں پھیلتی ہیں۔ ابرار نے کہا کہ گندگی کی وجہ سے علاقہ میں تعفن پھیلا رہتا ہے اور زندگی بسر کرنا مشکل بن گیا ہے۔ آصفہ نے بتایا کہ سیوریج کا نظام نہ ہونے کے برابر ہے۔ کھلی نالیاں اور بغیر ڈھکنوں کے مین ہول عوام کے لئے صبح و شام خطرے کا باعث بنے ہوئے ہیں اور علاقہ کے اکثر بچے ان مین ہولوں میں گر کر زخمی ہوتے رہتے ہیں۔ شاید انتظامیہ اس علاقہ کو لاہور کا حصہ نہیں سمجھتی جس کی وجہ سے اس پر توجہ نہیں دی جا رہی، عالم شان نے بتایا کہ علاقہ میں سٹریٹ لائٹ نہ ہونے کی وجہ سے ہر طرف تاریکی کا راج ہے اور اکثر چوری، ڈکیتی کی وارداتیں ہوتی رہتی ہیں۔

مزید : الیکشن ۲۰۱۳