کویت میں ایک پاکستانی سمیت تین افراد کو پھانسی

کویت میں ایک پاکستانی سمیت تین افراد کو پھانسی
کویت میں ایک پاکستانی سمیت تین افراد کو پھانسی

  

کویت (مانیٹرنگ ڈیسک) کویت میں ایک پاکستانی اور دو سعودی باشندوں کو پھانسی دے دی گئی ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق کویت میں پھانسی کی سزا پر چھ سال بعد عملدرآمد کیا گیا ہے جبکہ آخری پھانسی بھی ایک پاکستانی کو ہی دی گئی تھی۔ جن افراد کو پھانسی دی گئی ہے ۔کویتی وزارت انصاف کے مطابق قتل کے مرتکب تین  مجرموں کو پیر کے روز پھانسی دے دی گئی جن میں ایک پاکستانی بھی شامل ہےجبکمئی 2007ء کے بعد  ملک میں پھانسی دیے جانے کا یہ پہلا موقع ہے۔ان افراد میں ایک سعودی اور ایک بے وطن عرب شامل ہیں۔ تمام افراد کو سیکیورٹی اور عدالتی حکام کے سامنے سنٹرل جیل میں پھانسی دی گئی۔پاکستانی شہری کو ایک کویتی جوڑے  اور سعودی شہری کو ایک ہم وطن شہری کو قتل کرنے کے جرم میں پھانسی دی گئی جبکہ بے وطن عرب نے اپنے پانچ بچوں اور اہلیہ کو قتل کیا تھا۔ کویت نے چھ سال قبل موت کی سزا کو وضاحت کیے بغیر ختم کردیا تھا۔ایک مقامی اخبار نے پیر کو  بتایا ہے کہ ہ مزید 44 افراد سزائے موت کے منتظر ہیں۔ان میں الصباح خاندان کے دو افراد اور ایک خاتون شامل ہیں جنہوں نے 2009ء میں ایک شادی کے ٹینٹ کو آگ لگادی تھی جسکے باعث 57 افراد ہلاک ہوگئے تھے۔

1960ء کی دہائی کے بعد سے کویت میں 69 مرد اور تین غیر ملکی خواتین کو موت کی سزا دی جاچکی ہے۔ زیادہ تر کو قتل یا منشیات کی اسمگلنگ کے جرم میں سزا دی گئی۔

مزید : بین الاقوامی