سرمایہ کاری کیلئے پاکستان کا ماحول بھارت سے بہتر ہے:امریکی تھنک ٹینک

سرمایہ کاری کیلئے پاکستان کا ماحول بھارت سے بہتر ہے:امریکی تھنک ٹینک
 سرمایہ کاری کیلئے پاکستان کا ماحول بھارت سے بہتر ہے:امریکی تھنک ٹینک

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

واشنگٹن(مانیٹرنگ ڈیسک)امریکی تھنک ٹینک نے پاک ، بھارت تجارت و سرمایہ کاری کا تجزیہ کرتے ہوئے اعتراف کیا ہے کہ پاکستان میں سرمایہ کاری کیلئے ماحول بھارت سے زیادہ سازگار ہے ۔ دونوں ممالک کے درمیان تجارت کا حجم 40 ارب ڈالر تک پہنچ سکتا ہے تاہم تنازعات ختم کئے بغیر بھرپور معاشی تعاون سے فائدہ اٹھانا ممکن نہیں۔ امریکی تھنک ٹینک کی جاری رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ پاک بھارت تجارت کا موجودہ حجم 3 ارب ڈالر کے قریب ہے ۔ بہتر منصوبہ بندی سے اس حجم کو 40 ارب ڈالر تک بڑھایا جاسکتا ہے ۔ اسلام آباد نئی دہلی کیساتھ تجارتی روابط بڑھانے پر آمادہ نظر آتا ہے یہی وجہ ہے کہ دونوں طرف سے بہتر اصلاحات اور سرحد پر سامان کی آسان ترسیل کیلئے حوصلہ افزاءاقدامات کئے گئے ہیں۔ دونوں ممالک کے درمیان مذاکرات کے باوجود بداعتمادی کی فضاءبرقرار ہے ۔ پاکستان بھارت کو قومی سلامتی کیلئے خطرہ تصور کرتا ہے جبکہ بھارت ممبئی حملوں میں ملوث ملزموں کیخلاف کارروائی نہ کرنے پر پاکستان سے ناراض ہے ۔ نئی دہلی کشمیر مسئلے پر نرمی دکھانے کیلئے تیار نہیں اور پاکستان کو تجارت کیلئے نیپال' بنگلہ دیش اور بھوٹان تک راہداری بھی نہیں دی گئی۔ پاکستان نے بھی بھارت کو افغانستان کیلئے راہداری دینے سے انکار کیا۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ دوطرفہ تجارت میں بہتری کیلئے سیاسی و عسکری تنازعات کو معاشی تعاون کی راہ میں حائل نہیں ہونا چاہئے۔ پبلک پرائیویٹ شراکت داری کو بھی فروغ دیا جانا چاہئے۔ تنازعات کے خاتمے کیلئے اقدامات نہ کئے گئے تو معاشی تعاون کے ثمرات سے فائدہ نہیں اٹھایا جا سکتا۔

مزید : بزنس