ثابت ہو گیا ہے دھاندلی پر دھرنا اور احتجاج درست اقدام تھے ،عبدالعلیم

ثابت ہو گیا ہے دھاندلی پر دھرنا اور احتجاج درست اقدام تھے ،عبدالعلیم

لاہور(نمائندہ خصوصی )پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی رہنما عبدالعلیم خان نے کہا ہے کہ سپریم کورٹ کی طرف سے الیکشن کمیشن کو انتخابی نظام کو شفاف بنانے کیلئے دیے گئے ریمارکس نے اصل صورتحال کا بھانڈہ پھوڑ دیا ہے اور ایک مرتبہ پھر ثابت ہو گیا ہے کہ انتخابی دھاندلی کے خلاف پی ٹی آئی کا دھرنا اور ملک گیر احتجاج درست اقدام تھے غیر ملکی نجی دورے سے واپسی پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے عبدالعلیم خان نے کہا کہ نواز لیگ نے محض سیاسی جماعتوں کو لالی پاپ دینے کیلئے نام نہاد انتخابی اصلاحات کے نام پر پارلیمانی کمیٹی قائم کی ہے.جس کا کئی مہینوں تک اجلاس ہی منعقد نہیں ہوتا جس سست روی سے یہ کمیٹی کام کر رہی ہے آئندہ انتخابات بھی 2013کے مشکوک نظام کے تحت ہوں گے۔عبدالعلیم خان نے کہا کہ سپریم کورٹ پہلے ہی یہ قرار دے چکی ہے گذشتہ عام انتخابات بے ضابطگیوں سے بھرپور تھے اور الیکشن کمیشن آف پاکستان کو بڑے پیمانے پر اصلاحات لانے کی ضرورت ہے لیکن حکمرانوں کے کانوں تک جوں تک نہیں رینگی چونکہ نواز لیگ کواس انتخابی دھاندلی سے سب سے زیادہ فائدہ ہوا ہے ایک سوال کے جواب میں عبدالعلیم خان نے کہا کہ یہ امر افسوسناک ہے کہ الیکشن کمیشن انتخابی اصلاحات کیلئے سپریم کورٹ آف پاکستان کے احکامات کو بھی خاطر میں نہیں لا رہا اور مسلسل ٹال مٹول سے کام لیا جا رہا ہے انہوں نے کہا کہ ہم اس معاملے میں پارٹی ہیں اور ضرورت پڑنے پر عدالت میں دوبارہ جا سکتے ہیں عبدالعلیم خان نے اعادہ کیا کہ دھاندلی کے ایشو پر این اے 122کی کاروائی کو بھی منطقی انجام تک پہنچایا جائے گا اور ہم حکومت کے کسی بھی دباؤ کو خاطر میں نہیں لائیں گے ۔ دریں اثنا ء عبدالعلیم خان کی واپسی پر تحریک انصاف لاہور کے رہنماؤں کا اہم اجلاس یکم اپریل شام 5بجے منعقد ہو رہا ہے جس میں انٹرا پارٹی الیکشن کے حوالے سے اہم اعلانات متوقع ہیں ۔

مزید : میٹروپولیٹن 4


loading...