موسم میں تبدیلی کیساتھ ہی جنوبی پنجاب میں بجلی بحران سر اٹھانے لگا

موسم میں تبدیلی کیساتھ ہی جنوبی پنجاب میں بجلی بحران سر اٹھانے لگا

دائرہ دین پناہ ‘ وہاڑی ‘ میلسی ‘ راجن پور ‘بہاولنگر ( نمائندگان ) موسم میں تبدیلی کیساتھ ہی جنوبی پنجاب بھر میں بجلی کی اعلانیہ اور غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کا دورانیہ روز بروز بڑھنے لگا ہے ‘ جس کیوجہ سے معمولات زندگی اور کاروباری سرگرمیاں بری طرح متاثر ہونے لگی ہیں ۔ اس سلسلے میں دائرہ دین پناہ سے (بقیہ نمبر17صفحہ12پر )

نمائندہ خصوصی کے مطابق دیہی علاقے کالی پل اور دیگر علاقوں میں بجلی کی اذیت ناک لوڈشیڈنگ 20 سے 22 گھنٹے بجلی بند رہنے سے عوام کے صبر کا پیمانہ لبریز ‘ صبح ساڑھے 8 بجے سے لیکر دن ساڑھے 3 بجے تک مسلسل 8 گھنٹے کی لوڈشیڈنگ ایک گھنٹہ بعد ساڑھے 4 سے رات 9 بجے تک بجلی بندش نے عوام کی زندگی اجیرن بنا دی ۔ شہریوں محمد رضوان ‘ محمد عرفان ‘ محمد ریاض ‘ محمد ندیم ‘ محمد طارق ‘ غلام فرید ‘ اﷲ بخش ‘ غلام صابر ‘اور دیگر افراد نے احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کا سلسلہ بند کیاجائے ورنہ واپڈا آفس کا گھیراؤ کر نے پر مجبور ہونگے ۔ وہاڑی سے بیورو رپورٹ ‘ نمائندہ خصوصی کے مطابق بجلی کی لوڈشیڈنگ کی وجہ سے دن کے وقت مکھیاں اور رات کے وقت مچھروں نے جینا محال کررکھا ہے جس کی وجہ سے شہری پریشان ہیں جس پر عوامی وسماجی اور شہری حلقوں سلامت علی ، نظام الدین ، اصغر علی ، غلام مرتضیٰ ، غلام رسول ، اللہ دتہ ، محمد امین ، حشمت علی ، محمد اکرم ودیگر نے احتجاج کر تے ہوئے حکومت سے فی الفور بجلی کی لوڈشیڈنگ کے خاتمہ کا مطالبہ کیا ہے۔ میلسی سے نامہ نگار کے مطابق میلسی اورگرونواح میں بجلی طویل ترین کی لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ جاری ہے جس کی وجہ سے خانہ داری امورمتاثرہوئے اورکاروبارزندگی بھی مفلوج ہویااورپسینے سے شرابورشہری میپکوکے خلاف سراپااحتجاج بن گئے ۔ راجن پور سے ڈسٹرکٹ رپورٹر کے مطابق راجن پور میں بجلی کی غیراعلانیہ لوڈ شیڈ نگ ،اوپر سے مچھروں کی یلغار ،واپڈا انتظا میہ کی مبینہ نااہلی سے ضلع راجن پور کے شہریوں کا رات کاسکون بھی غارت ہوگیا۔ شہریوں محمد عثمان ،محمدعلی،محمداُسا مہ،ثقلین عباس ودیگر نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ باقی علاقوں سے بڑھ کر کہیں زیادہ لوڈ شیڈ نگ شروع کردی گئی ہے اور اس کاشیڈول بھی جاری نہیں کیا گیا ہے جس سے یہاں کے شہریوں کو نہ ہی دن کوسکون اور نہ رات کوچین میسر ہے اُن کا کہنا تھا کہ بجلی کی غیراعلانیہ لوڈ شیڈ نگ نے کارو بار پہلے ہی تباہ کردیئے ہیں اب سکون بھی چھین لیا ہے۔ بہاولنگر سے نمائندہ خصوصی کے مطابق بہاولنگر شہر میں بجلی کی بندش کا دورانیہ 8 سے 10 گھنٹے‘ جبکہ دیہی علاقوں میں 12 سے 14 گھنٹوں تک بجلی بند کی جارہی ہے کئی مقامات پر ہر گھنٹے کے بعد دو سے اڑھائی گھنٹے کیلئے بجلی بند کی جارہی ہے واپڈا حکام کا کہنا ہے کہ بجلی کی طلب میں اضافہ کے باعث لوڈ شیڈنگ میں دو گھنٹے کا اضافہ کیا گیا ہے اور کہیں بھی بغیر شیڈول کے بجلی بند نہیں کی جارہی ہے لوڈ شیڈنگ کے باعث کاروباری سرگرمیاں بری طرح متاثر ہورہی ہیں۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...