سینی ٹائزر ”فوگ گیٹ“ کا کامیاب تجربہ!

سینی ٹائزر ”فوگ گیٹ“ کا کامیاب تجربہ!

  

پاکستانی عوام کے لئے ایک اطمینان کی خبر بھی ملی ہے۔ جھنگ میں پہلا سینی ٹائزر واک تھرو گیٹ نصب کیا گیا ہے، جو 4سے 5ہزار افراد کے پورے پورے جسم کو جراثیم سے پاک کرنے کی اہلیت کا حامل ہے۔ یہ واک تھرو گیٹ جھنگ کی سبزی منڈی کے داخلی راستے پر نصب کیا گیا۔ اس کا افتتاح ڈپٹی کمشنر محمد طاہر وٹو اور لیفٹیننٹ کرنل اشفاق بیگ نے مشترکہ طور پر کیا۔ اِس واک تھرو گیٹ کی خصوصیت یہ ہے کہ اِس سے گزرتے وقت ہر شخص کو سینی ٹائزر فوگ سے نہلایا جائے گا اور یوں مکمل کلوری نیشن کے باعث گزرنے والا مکمل طور پر جراثیم سے پاک ہو جائے گا۔ اس دروازے کی صلاحیت 4سے 5ہزار افراد تک کی ہے۔ ڈپٹی کمشنر کے مطابق ایسے مزید گیٹ شہر کے اہم راستوں پر بھی لگائے جائیں گے۔ پاکستان اس گیٹ کے استعمال والا تیسرا ملک ہوگا۔ ایسے واک تھرو گیٹ کا پہلا تجربہ انڈونیشیا میں ہوا، جہاں مساجد کے باہر یہ گیٹ لگائے گئے اور ہر نمازی اس سے گزر کرجاتا ہے۔ مساجد کو بھی سینی ٹائزر فوگ سے صاف کیا جاتا ہے۔ جھنگ (پاکستان) میں اس کامیاب تجربے نے یہاں بھی تحفظ کی راہیں کھول دی ہیں۔ حکومت کو یہ کام سرکاری سطح پر کرنے کی ضرورت ہے۔ جلد از جلد ایسے گیٹ تیار کرکے تمام مارکیٹوں،مساجد اور مرکزی بازاروں کے داخلی اور خارجی مقامات پر نصب کرنا چاہئیں، تاکہ نمازی مساجد اور خریدار دکانوں اور ضروری عملہ اپنے کام پر جا سکے، جس قدر جلد یہ کام ہوگا، تحفظ بھی اسی قدر بہتر ہوگا اور نمازی بھی مساجد جا کر عبادت اور اللہ سے دُعا کر سکیں گے۔ سینی ٹائزر سپرے بھی جلد از جلد شروع کرنا ہوگی۔

مزید :

رائے -اداریہ -